وزیراعظم نے نارو وال اور پسرور میں نیشنل ہائی وے اتھارٹی کے دو اہم روڈمنصوبوںکا سنگ بنیاد رکھ دیا

ہفتہ مئی 16:18

نارووال /پسرور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے نارو وال اور پسرور میں نیشنل ہائی وے اتھارٹی کیدو اہم روڈمنصوبوںکا سنگ بنیاد رکھ دیا ہے۔ ۔ہفتہ کو وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے ان دونوں منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھا۔ پسرور آمد پر کیڈٹ کالج پسرور کے کیڈٹس نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کو گارڈ آف آنر پیش کیا، اور انہیں سیالکوٹ پسرور روڈکو دو رویہ کرنے اور اس کی بہتری کے منصوبے کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔

نارووال اس وقت نیشنل ہائی وے نیٹ ورک سے منسلک نہیں ہے جس کی وجہ سے ناقص ٹرانسپورٹیشن اور یہ علاقہ تنہا اور نظرانداز ہورہا تھا ۔ یہ علاقہ اہم جغرافیائی اہمیت کا حامل اورمعیاری زرعی مصنوعات بشمول امرود،کینو اور لائیو سٹاک کی برآمدکی وسیع صلاحیت کا حامل ہے۔

(جاری ہے)

اس شاہراہ سے اقتصادی بہتری اورروزگارکے نئے مواقع میسر آسکیں گے۔ چاررویہ ڈیول کیرج وے منصوبہ نارووال ، نارنگ منڈی اوراس کے گردونواح کے علاقوں کو لاہور،، سیالکوٹ موٹروے لنک ہائی وے سے ملائے گا، تیز ترین ٹرانسپورٹیشن کی دستیابی سے زراعت، اقتصادی اورتجارتی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا۔

نارووال بائی پاس جو رنگ روڈ کا حصہ ہے اس سے نارووال شہرمیں ٹریفک کا بوجھ کم ہوگا اورشکرگڑھ اور پسرورکیلئے بلاتعطل سفری سہولیات مہیا کرے گا، تقریباً15 لاکھ کی آبادی اس منصوبہ سے مستفید ہوگی۔ 11 ہزار گاڑیاں روزانہ اس سیکشن سے گزریں گی اور لاہور اور نارووال کے درمیان سفر کے دورانیہ میں ایک گھنٹہ کی کمی آئے گی۔ اس منصوبے پر16 ارب روپے لاگت آئے گی اور یہ منصوبہ ڈیڑھ سال میں مکمل ہوگا۔

56.6کلومیٹر طویل سیالکوٹ پسرور روڈ ضلع سیالکوٹ کا اہم روڈ لنک ہے جو آبادی کے دو بڑے مراکز اور اس سے ملحقہ علاقوں کوسفری سہولیات مہیا کرے گا۔ اس وقت اس دو رویہ ہائی وے پر12 ہزار گاڑیاں یومیہ گزرتی ہیں اور یہاں ٹریفک کے مسائل کا سامنا ہے، حادثات کی شرح بھی زیادہ ہے اورماحولیاتی مسائل کا بھی سامنا ہے۔ اس روڈ کی ڈیولائزیشن اوربحالی سے محفوظ اورمناسب ٹرانسپورٹیشن کی سہولت ملے گی، نکاسی آب اور پانی کے راستوں کے سٹرکچر میں بہتری سے سیلاب کے دوران پیش آنے والے مسائل کے حل میں مدد ملے گی۔ اس منصوبے سے 20لاکھ افراد استفادہ کریں گے۔