جوڈیشل ملیر کا کروڑوں روپے فراڈ کے متعدد مقدمات میں ملوث قیدی کا جیل سے غائب ہونے پر شدید برہمی کا اظہار

ہفتہ مئی 16:18

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) جوڈیشل ملیر کا کروڑوں روپے فراڈ کے متعدد مقدمات میں ملوث قیدی کا جیل سے غائب ہونے پر شدید برہمی کا اظہار، عدالت نے سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل ملیر کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے قیدی کی جیل میں موجودگی کا تمام ریکارڈ طلب کرلیا۔جوڈیشل ملیر نے کروڑوں روپے فراڈ کے متعدد مقدمات میں ملوث قیدی شوکت حیات کا جیل سے غائب ہونے پر شدید برہمی کا اظہار کیا۔

۔۔۔عدالت میں مدعی مقدمہ نورزادہ نے قیدی کے جیل سے فرار ہونے کا بھی انکشاف کیا۔۔عدالت نے کروڑوں روپے فراڈ کے متعدد مقدمات میں ملوث قیدی کے اچانک غائب ہونے پر سپریٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل ملیر کو شوکاز نوٹس بھی جاری کیا۔۔۔شوکاز نوٹس میں عدالت نے سپریٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ جیل ملیر سے استفسار کیا کہ بتایا جائے کی قیدی کہاں گیا اور اسے جیل سے کس نے فرار کرایا اور قیدی کے جیل سے فرار ہونے کا زمہ دار کون ہے،،، شوکاز میں عدالت کی جانب سے مزید استفسار کیا کہ قیدی کب سے غائب ہے،،، عدالت کو اس حوالے سے کیوں آگاہ نہیں کیا گیا،،، اگر قیدی کو رہا کیا گیا ہے تو اسے عدالتی احکامات کے بغیر کیسے رہا کیا گیا۔

(جاری ہے)

۔۔۔۔عدالت نے قیدی کی جیل میں موجودگی کا تمام ریکارڈ بھی طلب کرتے ہوئے کارروائی ملتوی کردی۔۔واضح رہے کہ ملزم شوکت حیات کو 95 لاکھ روپے کے فراڈ کیس میں اسٹیل ٹاون تھانے نے گرفتار کیا تھا،،، ملزم شوکت حیات کے خلاف تھانہ شاہ لطیف اور سکھن میں فراڈ کے مقدمات درج تھے

متعلقہ عنوان :