چیف جسٹس نے خاران میں 6 مزدوروں کے قتل کا نوٹس لے لیا

کیس کی سماعت 11 مئی کو کوئٹہ رجسٹری میں ہوگی ،ْ چیف سیکرٹری اور آئی جی بلوچستان کو نوٹس جاری

ہفتہ مئی 17:11

چیف جسٹس نے خاران میں 6 مزدوروں کے قتل کا نوٹس لے لیا
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے بلوچستان کے ضلع خاران میں 6 مزدوروں کے قتل کا نوٹس لے لیا۔کیس کی سماعت 11 مئی کو کوئٹہ رجسٹری میں ہوگی جس کیلئے چیف سیکریٹری بلوچستان اور آئی جی بلوچستان کو نوٹس جاری کردیئے گئے۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز بلوچستان کے ضلع خاران کے علاقے لیجے توک میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے 6 مزدور جاں بحق اور ایک زخمی ہوگیا تھا۔

(جاری ہے)

حکام کے مطابق مزدور علاقے میں تعمیراتی کام میں مصروف تھے کہ نامعلوم مسلح ملزمان نے ان پر فائرنگ کر دی اور فرار ہو گئے۔۔فائرنگ کے واقعہ میں جاں بحق افراد کی لاشوں اور زخمی کو سول ہسپتال خاران منتقل کیا گیا جہاں سے بعدازاں انہیں کوئٹہ منتقل کر دیا گیا۔۔جاں بحق ہونے والے مزدوروں کا پنجاب سے ہے، جن کی لاشوں کو ان کے آبائی علاقے اوکاڑہ روانہ کردیا گیا۔مزدوروں کے قتل کا مقدمہ لیویز تھانہ خاران میں مقتولین کے رشتہ دار تنویر احمد کی مدعیت میں درج کیا گیا، جس میں قتل،، اقدام قتل اور انسداد دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔