پاکستان اور بلجیئم میں دو طرفہ تجارت بڑھانے کے کثیر مواقع موجود ہیں ، زاہد لطیف خان

ہفتہ مئی 18:06

پاکستان اور بلجیئم میں دو طرفہ تجارت بڑھانے کے کثیر مواقع موجود ہیں ..
راولپنڈی۔5 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر زاہد لطیف خان نے کہا ہے کہ پاکستان اور بلجیئم میں دو طرفہ تجارت بڑھانے کے کثیر مواقع موجود ہیں، پاکستان کو برآمدات میں اضافے کے لیے غیر روایتی شعبوں میں سرمایاکاری کے مواقع تلاش کرنا ہوں گے ان میں، فارما سیئوٹیکل، ہیلتھ، قیمتی پتھراور انفارمیشن ٹیکنالوجی شامل ہیں یورپی منڈیوں میں پاکستانی مصنوعات کی خاصی مانگ ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے چیمبر میں وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ بلجیئم میں پاکستانی سفارتخانہ رابطے میں ہے اور تمام انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے تجارتی وفد کے دورے کا مقصد پاکستان کا امیج بہتر بنانا اور دو طرفہ تجارت کے مواقعوں میں اضافہ کرنا ہے انہوں نے کہا کہ انہوں نے کہا کہ یورپی یونین میں بلجیئم پاکستان کے ساتھ پانچواں بڑا شراکت دار ہے دونوں ملکوں کے درمیاں دو طرفہ تجارت کا حجم 884ملین ڈالر کے قریب ہے جسے بڑھانے کی ضرورت ہے پاکستان ، ٹیکسٹائل، چمڑا، بے بی سیریل، اور کھیلوں کا سامان بلجیئم کو برآمد کرتا ہے۔

(جاری ہے)

وائس چیئر مین ریجنل کمیٹی خورشید برلاس نے کہا کہ کانفرنس کے موقع پر وہاں کے چیمبر آف کامرس کے ساتھ ایم او یوز پر بھی دستخط کیئے جائیں گے جس کا مقصد دوطرفہ تجارتی تعاون بڑھانا اور پاکستان میں غیر ملکی سرمایا کاری لانا ہے ۔راولپنڈی چیمبر آف کامرس کا تجارتی وفد بلجیئم کا دورہ کرے گا اور وہاں بزنس کانفرنس بھی منعقد کرے گا، کانفرنس کے موقع پر بی ٹو بی ملاقاتیں بھی ہوں گی اس سلسلے میں تمام انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں۔