4لائوڈ سپیکرکے استعمال کی اجازت خوش آئند ہے‘ڈاکٹرراغب حسین نعیمی

پنجاب بھرمیں لاؤڈ سپیکر ایکٹ کے تحت علماء کرام پر قائم مقدمات ختم کئے جائیں‘ناظم اعلیٰ جامعہ نعیمیہ

ہفتہ مئی 18:30

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) جامعہ نعیمیہ کے ناظم اعلیٰ وممبراسلامی نظریاتی کونسل پاکستان علامہ ڈ اکٹر مفتی محمد راغب حسین نعیمی نے کہاہے کہ پنجاب اسمبلی سے 4 لائوڈ سپیکرکے استعمال کی اجازت کابل منظور کیاجاناخوش آئند ہے،بل منظورہونے سے اذان اوردرود و سلام کی آواز سے اب زیادہ سے زیادہ فرزندانِ اسلام مستفیض ہوسکیں گے،علماء اہل سنت کی اس حوالے سے کوششیں قابل قدر ہیں،جنہوں نے مساجد میں 4 لائوڈ سپیکر کے استعمال پر عائد پابندی ختم کرانے کیلئے مسلسل جدوجہد کی،لاؤڈ سپیکر ایکٹ ترمیمی بل 2018ء منظور کرکے حکومت پنجاب نے علماء کرام کے مفتقہ مطالبہ کو پوراکردیاہے تاہم پنجاب بھرمیں لاؤڈ سپیکر ایکٹ کے تحت علماء کرام پر قائم مقدمات جلد ختم کئے جائیں۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز جامعہ نعیمیہ میں علماء کرام کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہاہے کہ پاکستان کے اسلامی تشخص کے تحفظ کیلئے ہرممکن کوشش جاری رکھیں گے۔ دین کی ترویج اور بھٹکتی انسانیت کو راہِ راست پر لانا علماء کی زندگیوں کانصب العین ہے۔ مدارس اہل سنت اشاعت دین ،فروغ تعلیم کیلئے انتہائی اہم کردارادا کررہے ہیں۔