واویلا کرنے والوں کو آئندہ انتخابات میں اندازہ ہو جائے گا کہ ان کا مقابلہ کس سے ہی ،تحریک انصاف بلوچستان

سونامی روکنے میں ناکامی پر کرپٹ مافیانے الزام تراشی شروع کردی ہے،رہنمائوں کاخطاب

ہفتہ مئی 19:23

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) پاکستان تحریک انصاف بلوچستان کے رہنمائوں نے کہا ہے کہ عمران خان کو سیاستدان نہ سمجھنے والے او ر واویلا کرنے والوں کو آئندہ انتخابات میں اندازہ ہو جائے گا کہ ان کا مقابلہ کس سے ہی سونامی روکنے میں ناکامی پر کرپٹ مافیانے الزام تراشی شروع کردی ہے، شریفوں کے دن گنے چاچکے ہیں۔یہ بات تحریک انصاف بلوچستان کے جنرل سیکرٹری قاسم خان سوری ، مرکزی،سردارخادم حسین وردگ ،سینئر نائب صدر نوابزادہ شریف جوگیزئی ،، حاجی سیف اللہ خان کاکڑ ،ملک سمندر خان کاسی ایڈؤوکیٹ،عبدالباری بڑیچ ،،کوئٹہ سٹی کے صدر نورالدین کاکر، داود خان ،ہمایوں بارکزئی ،سیدعنایت خان ،ظہورخان شادیزئی ، عبدالصمد دمڑ،ملک نصیب اللہ بیٹنی،حاجی حسین کاکڑ اوردیگر نے حاجی علی ، حاجی رحیم کاسی ، بشیراحمد دمر، حاجی منصوراحمد دمڑ، مہراب جتک ، حاجی عبدالعزیز دمڑ،حاجی راز محمد ،عبدالناصر پانیزئی اوردیگر کی مختلف قوم پرست اور مذہب پرست جماعتوں سے مستعفی ہوکر پی ٹی آئی میں شمولیت کے موقع پر چشمہ اچوزئی میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

(جاری ہے)

انہوں نے نئے شمولیت کرنے والوں کومبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ نئے شمولیت کرنے والوں نے تحریک انصاف میں شامل ہونے کا ایک اچھا اور بہترین فیصلہ کیا ہے انکی پارٹی میں شمولیت سے تحریک انصاف بلوچستان میں مزید فعال اور منظم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف وہ واحد جمہوری جماعت ہے جو ملک سے کرپشن اور بدعنوانی کے خاتمے کیلئے جدوجہد کر رہی ہے اورانشاء اللہ برسراقتدارآکر لٹیروں سے لوٹی گئی دولت کی ایک ایک پائی کا حساب لے گی۔

انہوں نے کہا کہ پارٹی کے چیئرمین عمران خان نے جن 11نکات کا اعلان کیا ہے اس سے ملک میں ترقی اور خوشحالی کے نئے دور کا آغاز ہوگا ۔انہوں نے کہاکہ لاہور میں ہونیوالے جلسے نے پوری پاکستانی قوم کے ضمیر کو بیدار کردیا ہے اب کسی بھی محب وطن پاکستان کیلئے عمران خان کا ساتھ دینے کے سوا کوئی دوسرا راستہ نہیں بچا۔انہوں نے کہا کہ 70سال سے بلوچستان میں قوم پرستوں اور مذہب پرستوں نے قومیت اور مذہب کے نام پر عوام سے ووٹ لے کر اپنے مفادات حاصل کئے اور عوام کی ترقی اور خوشحالی کیلئے کوئی ترقیاتی کام نہیں کئے۔

انہوں نے کہا کہ 2013ء کے عام انتخابات میں دھاندلی کے ذریعے قوم پرست جماعتوں کو جتوا کر اقتدار دیا گیا لیکن قوم پرستوں نے بلوچستان کی ترقی کیلئے آنے والے اربوں روپے کے فندز کرپشن اور خوردبرد کی نظر کئے بلوچستان کا صوبائی دارالحکومت کوئٹہ اکیسویں صدی میں بھی کھنڈرات کا منظر پیش کر رہا ہے انشاء اللہ 2018ء کے انتخابات میں عوام ووٹ کی پرچی کے ذریعے قوم پرستوں کا احتساب کرکے پاکستان تحریک انصاف کو کامیابی سے ہمکنار کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف عوام کو یقین دلاتی ہے کہ اگر عوام نے پارٹی پر اعتماد کیا تو اقتدار میں آکرانکے تمام جائز مسائل کے حل کیلئے عملی اقدامات اٹھائے گی۔