پیپلزپارٹی کے صدر اور دو وزیراعظم نے نیب کے کیسز کا سامنا کیا ، ڈاکٹر نفیسہ شاہ

نیب نے پنجاب کا رخ کیا تو وزیراعلیٰ کو دن میں تارے اور رات کو سورج نظر آرہا ہے وزیراعظم بھی خلائی مخلوق کی بات کرتے ہیں وہ خود بتائیں کہ یہ خلائی مخلوق ان کی ایڈمنسٹریشن کے ماتحت ہیں کہ نہیں،میڈیا سے گفتگو

ہفتہ مئی 20:33

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) پاکستان پیپلزپارٹی پارلیمنٹرین کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کے صدر اور دو وزیراعظم نے نیب کے کیسز کا سامنا کیا ہے، جب نیب نے پنجاب کا رخ کیا تو وزیراعلیٰ پنجاب کو دن میں تارے اور رات کو سورج نظر آرہا ہے وزیراعظم بھی خلائی مخلوق کی بات کرتے ہیں وہ خود بتائین کہ یہ خلائی مخلوق ان کی ایڈمنسٹریشن کے ماتحت ہیں کہ نہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کے روز میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا نذیر ڈھوکی بھی ان کے ہمراہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کے سپریم لیڈر نواز شریف نے بیان دیا ہے کہ ان کا مقابلہ خلائی مخلوق سے ہے اور وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا ہے کہ نیب کا سورج پنجاب میں چمک رہا ہے اور ان کو دن میں تارے اور رات میں سورج نظر آرہا ہے۔

(جاری ہے)

وزیر اعلیٰ پنجاب کہتے ہیں کہ نیب سندھ سے رعایت کررہی ہے جبکہ نیب اس حوالے سے وضاحت کر چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کے صدر اوروزیر اعظم نے نیب کیسز کا سامنا کیا ہے ۔ وزیراعظم نے چار سال جیل کاٹی ہے اور صدر نے بارہ سال جیل کاٹی ہے اور پھر احتساب عدالت سے باعزت بری ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں شرجیل میمن کی ضمانت نہیں ہوئی اور کیپٹن صفدر کی گرفتاری نہیں ہوئی پیپلزپارتی کے سابق وزیر حامد سعید کاظمی اور ڈاکٹر عاصم نے بھی جیلیں کاٹی ہیں انہوں نے کہا کہ میرا وائسرائے اعظم سے سوال ہے کہ سی پیک کے منصوبون کے ریکارد کو آگ کیوں لگائی گئی تھی۔

سندھ حکومت اداروں کا احترام کرتی ہے۔ سندھ میں بہت سے سیکرٹریز جیلوں میں بند ہیں جبکہ صرف احد چیمہ کی گرفتاری سے وزیراعلیٰ پنجاب کی چیخیں نکل گئی ہیں پیپلزپارٹی قانون کے دائرے میں رہ کر مقابلہ کرتی ہے نیب کی کارروائیوں کو سندھ اور پنجاب کا مسئلہ نہ بنایا جائے نیب کا پیپلزپارٹی سے سخت رویہ رہا ہے جبکہ وزیر اعلیٰ پنجاب نیب کے سورج کی پہلی کرن کو بھی نہیں سنبھال سکے۔

آصف علی زرداری نے کہا کہ جمہوریت کمزور ہورہی ہے ۔ نفیسہ شاہ نے کہا کہ وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی بھی خلائی مخلوق کی بات کررہے ہیں وہ بتائیں کہ یہ خلائی مخلوق کس کے ماتحت ہے اور نواز شریف جیل جانے کی تیاریاں کررہے ہیں یا انہوں نے خلائی مخلوق کے حوالے سے فلمیں دیکھ رکھی ہیں جس کی وجہ سے ان کو خلائی مخلوق یاد آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف بتائیں کہ گزشتہ الیکشن آروز کے الیکشن نہیں تھے۔ سندھ میں نیب کے کیسز میں فریال تالپور کا نام نہیں ہے۔ میر منور تالپور کو ہائی کورٹ نے بری کردیا تھا سہیل انور سیال کی شکایت کرنے والا سامنے نہیں آیا۔ جبکہ نواز شریف نیب عدالت میں 61 حاضریوں کا بتاتے پھر رہے ہیں جبکہ پیپلزپارٹی کی قیادت کی عدالتوں میں حاضری لاتعداد ہیں۔