اسلامی مکاتب فکر کی قیادت مسلکی اختلافات کے باوجود اجتماعی مسائل پرمتحد ہے، ڈاکٹر عبدالغفور راشد

ہفتہ مئی 20:41

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) پاکستان یونائیٹڈ کونسل کے چیئرمین اور ناظم ذیلی تنظیمات ڈاکٹر عبدالغفور راشد نے متحدہ مجلس عمل کی تشکیل پر اظہار مسرت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام اسلامی مکاتب فکر کی ایک پلیٹ فارم سے مشترکہ جدوجہد سے عالمی سطح پراتحاد امت کا مثبت پیغام جانے کے ساتھ مذہبی ، سیاسی ، ثقافتی اورتمدنی اقدار کا تحفظ بھی کیا جائے گا۔

پاکستان میں فرقہ واریت کے خاتمے میں ایم ایم اے نے پہلے بھی کلیدی کردار ادا کیا تھا۔اب بھی عوام اچھی توقعات وابستہ کئے ہوئے ہیں۔ جمعیت اساتذہ کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث پروفیسر ساجد میر کی قیادت میں کارکنان اور تنظیمات متحدہ مجلس عمل ک سیاسی اور اتحادی ایجنڈے کو فروغ دینے میں اپنا کردار ادا کریں گی۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ ایم ایم اے کو صرف ایک الیکشن تک محدود نہ رکھا جائے، اسے مستقل اتحاد کی شکل دی جانی چاہیے۔ اس سے پاکستان میں بھی اور دیگر ممالک میں بھی اچھے اثرات مرتب ہوں گے کہ تمام مکاتب فکر کی قیادت اپنے فروعی ، مسلکی اور گروہی اختلافات کو ایک طرف رکھتے ہوئے اجتماعی مسائل پرمتحد ہے۔ اوراس پالیسی کے 2002ء کے انتخابات میں مثبت نتائج آئے تھے۔ انشااللہ 2018ء کے انتخابات میں بھی کامیاب ہوگی۔