مقبوضہ کشمیر ، قابض بھارتی فوج کے ظلم و ستم کی انتہا،4 کشمیری نوجوان طلباء شہید

درجنوں کشمیری گرفتار،احتجاج کا سلسلہ وسیع ،کشمیری مظاہرین کی بھارتی فوج کے خلاف نعرے بازی،انٹرنیٹ سروس معطل

ہفتہ مئی 21:01

سری نگر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے ظلم و ستم کی انتہا کر دی،اشتعال انگیز فائرنگ کر کی4 کشمیری نوجوان طلباء شہید کر دیا،درجنوں کشمیریوں کو گرفتار کر کے جیل میں ڈال دیا گیا،شہادت کے برد احتجاج کا سلسلہ وسیع ہو گیا،کشمیری مظاہرین نے بھارتی فوج کے خلاف نعرے بازی کی،،بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے سری نگر سمیت حساس اضلاع میں انٹرنیٹ سروس بند کردی ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی فائرنگ سے چار طلبا شہید ہو گئے ہیں۔ کشمیری نوجوانوں کی شہادت کے بعد ضلع بھر میں احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔۔مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے چٹہ بل کے علاقے میں ظلم و ستم کی انتہا کر دی۔ جارحیت پسند بھارتی فوج نے سرچ آپریشن کے دوران چار نہتے کشمیری نوجوانوں کو فائرنگ کر کے شہید کردیا۔

(جاری ہے)

کشمیری نوجوانوں کی شہادت کے بعد ضلع بھر میں احتجاج کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے، مظاہرین نے بھارتی فوج کے خلاف نعرے بازی کی۔۔فوج نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے تشدد کا راستہ اختیار کرتے ہوئے آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوئی فائرنگ کی۔ اس دوران بھارتی فوج کی گاڑی نے ایک کار سوار کو بھی ٹکر مار کر زخمی کردیا۔۔مقبوضہ کشمیر کی بھارت نواز کٹھ پتلی انتظامیہ نے سری نگر سمیت حساس اضلاع میں انٹرنیٹ سروس بند کردی ہے جبکہ درجنوں مظاہرین کو حراست میں لے کر جیل منتقل کردیا گیا ہے۔۔حریت پسند رہنما بھی گھروں میں نظر بند ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر عالمی قوتوں اور اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کمیشن کی جانب سے بارہا