ماڈل قبرستان میں تدفین کے آغاز کے لئے دعائیہ تقریب منعقد

ہفتہ مئی 22:16

فیصل آباد۔5 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) پنجاب شہر خموشاں اتھارٹی کے زیراہتمام ستیانہ روڈ پر خانوآنہ بائی پاس کے قریب ایک ارب روپے کی 92 کنال قیمتی اراضی پر 10 کروڑ روپے کی لاگت سے ساڑھے چار ہزار قبروں کی گنجائش پرمشتمل ماڈل قبرستان ( شہر خموشاں ) کا اہم سماجی منصوبہ آپریشنل ہو گیا ہے جہاں میت کی تدفین تعظیم اور شرعی تقاضوں کے مطابق انجام دینے کی تمام تر سہولیات ایک ہی جگہ دستیاب ہیں اور اس پراجیکٹ کے تحت اپنے پیاروں کی تدفین کے لئے مالی حیثیت نہ رکھنے والوں کا خرچہ حکومت پنجاب برداشت کرے گی ۔

ماڈل قبرستان میں تدفین کے آغاز کے لئے دعائیہ تقریب منعقد ہوئی جس میں صوبائی وزیر قانون رانا ثناء الله خاں مہمان خصوصی تھے ۔ وزیرمملکت برائے ٹیکسٹائل حاجی محمد اکرم انصاری ‘ ڈائریکٹر جنرل پنجاب شہر خموشاں اتھارٹی سلمان صوفی ‘ ڈپٹی کمشنر سلمان غنی ‘ ارکان قومی و صوبائی اسمبلی میاںمحمد فاروق ‘میاںعبدالمنان ‘ شیخ اعجاز احمد ‘محمد نواز ملک ‘ حاجی خالد سعید ‘ حاجی الیاس انصاری ‘ فقیر حسین ڈوگر ‘ میئر میونسپل کارپوریشن محمد رزاق ملک‘ چیئرمین ضلع کونسل چوہدری زاہد نذیر ‘وائس چیئرمین ضلع کونسل خالد پرویز ورک ‘رانا ذوالفقار خاں‘مختلف یونین کونسلز کے چیئرمین ‘ وائس چیئرمین ‘ کونسلرز ‘ مسلم لیگی رہنما و عمائدین شہربھی بڑی تعداد میں موجود تھے ۔

(جاری ہے)

صوبائی وزیر قانون نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ تکریم کے ساتھ تدفین کے لئے ماڈل قبرستانوں کے قیام کامنصوبہ حکومت پنجاب کا احسن اقدام ہے جو کہ ایک بڑی سماجی خدمت ہے اور صوبہ کے تین بڑے شہروںمیں شہر خموشاں کا پراجیکٹ مکمل کرایا گیا ہے جس کا دائرہ پنجاب کے تمام اضلاع تک پھیلا دیاجائے گا ۔ انہوںنے کہا کہ قبرستان بھی معاشرے کی اہم بنیادی ضرورت ہیں اورفیصل آباد کے ماڈل قبرستان میں بہترین جناز گاہ ‘ وضو خانہ ‘مرد و عورت میت کے لئے الگ الگ غسل دینے کا اہتمام ‘ میت محفوظ رکھنے کے لئے سرد خانہ ‘ میت کو لانے والی ایمبولینس گاڑی ‘ گورکن ‘ فلاور شاپ و دیگر ضروری سہولتوں کے علاوہ قبرستان کو 7 ہزار قبروں تک توسیع دینے کے لئے اراضی بھی دستیاب ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ٹال فری نمبر 0300-3331483 بھی چوبیس گھنٹے فنکشنل رہے گا جس پرمیت کی تدفین کیلئے رابطہ کرنے والی ایمبولینس گاڑی بھی حاصل کی جا سکے گی ۔ انہوں نے کہا کہ کسی بھی علاقہ سے تدفین کے لئے میت لانے کے سلسلے میں فوری طور پر چار ایمبولینس گاڑیاں فراہم کی جارہی ہیں ۔ صوبائی وزیر قانون نے شہر خموشاں کے پراجیکٹ کو تیز رفتاری سے مکمل کرنے کے سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل شہرخموشاں اتھارٹی سلمان صوفی اور ڈپٹی کمشنر سلمان غنی کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس منصوبے میں رہ جانے والی معمولی سی کمی کو بھی جلد پورا کیا جائے ۔

انہوںنے عمائدین شہرسے مخاطب ہوتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ ( ن) کی حکومت نے صوبہ میں وزیر اعلی محمد شہباز شریف کی قیادت میں صرف سڑکیں ‘ موٹر ویز ‘ فلائی اوورز ‘ انڈر پاسز ہی نہیں بنائے بلکہ عوامی ضرورت کے دیگر منصوبے بھی مکمل کرائے ہیں جن میں ماڈل قبرستانوں کا قیام بھی شامل ہے جو کہ موجودہ قبرستانوں میں میتوں کو دفنانے کے لئے جگہ و ضروری سہولتوں کی عدم فراہمی کو مدنظر رکھ کر شروع کیا گیا اور لاہور‘ سرگودھاکے بعد فیصل آباد میں بھی اس سہولت کا آغاز کردیاگیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ فیصل آباد میں پانچ سالوںمیںمثالی ترقی ہوئی ہے اور یہاں کے باسی اور دوسرے شہروںسے آنے والے اسے خوبصورت ‘ صاف ستھرا اورصوبہ کے دوسرے بڑے شہر کے تقاضوں پر پورا اترنے والا شہرقرار دے رہے ہیں۔ صوبائی وزیر قانون نے کہاکہ سیاسی مخالفین کے منفی پراپیگنڈہ کے باوجود عوامی خدمت کاسفر تسلسل کے ساتھ جاری رکھا اور بجلی کے بحران کے خاتمے کے لئے میگا پراجیکٹس کے قیام کے علاوہ دہشت گردی کوختم کرنے پر خصوصی توجہ دی اور آئندہ بھی خدمت کا عمل اسی جذبے کے ساتھ جاری رکھیں گے ۔

رانا ثناء الله خاں نے شہر خموشاں کے مختلف حصوں کادورہ بھی کیا اور سرد خانے میں تیس میتوں کومحفوظ رکھنے کے لئے جرمنی سے درآمد کئے گئے جدید پلانٹ و دیگرسہولیات کی دستیابی کو چیک کیا ۔ڈائریکٹر جنرل پنجاب شہر خموشاں اتھارٹی سلمان صوفی نے ماڈل قبرستان کے قیام کے اغراض ومقاصد پر روشنی ڈالی اور کہا کہ فیصل آباد میں یہ منصوبہ وزیر قانون پنجاب رانا ثناء الله خاںکی خصوصی کاوشوں ‘ ڈپٹی کمشنر سلمان غنی اورارکان اسمبلی کی مسلسل مانیٹرنگ کی بدولت تیزی رفتاری سے مکمل ہوا ۔

انہوںنے بتایا کہ شہر خموشاں میں میت کی تدفین کے لئے ضروری سہولتوں کے علاوہ انتظار گاہ ‘کنٹرول روم ‘ گارڈ روم ‘ گورکن و قبر کھودنے کے انتظامات بھی موجود ہیں جبکہ صاحب ثروت سے میت کی تدفین کے لئے اخراجات تقریبا بیس ہزار روپے وصول کئے جا سکتے ہیں، انہوں نے بتایا کہ اتھارٹی کے زیر اہتمام سمن آباد میں بہشتی قبرستان کی اپ گریڈیشن کاکام بھی جاری ہے جبکہ فیصل آباد کے بعد سیالکوٹ ‘ ملتان ‘ڈیرہ غازی خاں و دیگر اضلاع میںبھی جلد شہر خموشاں منصوبہ شروع کیا جارہا ہے ۔

انہوں نے فیصل آباد کے شہریوں کواس سہولت اور ٹال فری نمبر کے بارے میںآگاہی کے لئے تشہیر کے تمام ذرائع بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیا ۔اس موقع پر ماڈل قبرستان ( شہرخموشاں )کے آغاز پر خصوصی دعا بھی کرائی گئی ۔