متحدہ کے گڑھ میں متحدہ کا دفتر بند،’’ ریجیکٹ ایم کیوایم‘‘ مہم چل پڑی

اب متحدہ ناقابل قبول ہے، مہاجر کارڈ استعمال کرکے کراچی والوں کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا،ٹوئیٹرپر صارفین کا ردعمل

ہفتہ مئی 23:03

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 مئی2018ء) ایم کیوایم پاکستان کے گڑھ لیاقت آباد میں عوامی رابطہ آفس ختم کردیا گیا جبکہ پتنگ اور جھنڈابھی اتار دیا گیا، ’’کراچی ریجیکٹ ایم کیو ایم‘‘ ٹویٹر پر ٹرینڈ بن گیا۔۔ایم کیوایم کے لیے کراچی میں مشکلات بڑھنے لگیں، لیاقت آباد میں عوامی رابطہ آفس علاقہ مکینوں نے بند کردیا۔ سوشل میڈیا پر بھی ریجیکٹ ایم کیوایم مہم چل پڑی۔

کراچی میں ایم کیوایم کا گڑھ سمجھے جانے والے لیاقت آباد کے مکینوں نے عوامی رابطہ آفس بند کردیا۔

(جاری ہے)

ٹائون آفس یوسی 37کے دفتر سے پتنگ اورجھنڈا اتار لیا گیا۔ دروازے پر لگا پینا فلیکس بھی ہٹا دیا۔ علاقے میں صفائی اور ترقیاتی کام نہ ہونے پر مکینوں نے انتہائی قدم اٹھایا۔ تقسیم در تقسیم کے بعد سیاسی قلعہ بچاتی ایم کیوایم کو سوشل میڈیا پر بھی مخالفت کا سامنا ہے۔۔ٹوئٹر پر ریجیکٹ ایم کیوایم ٹاپ ٹرینڈ بن گیا، صارفین کہتے ہیں اب متحدہ ناقابل قبول ہے۔ مہاجر کارڈ استعمال کرکے کراچی والوں کو بیوقوف نہیں بنایا جاسکتا۔ جو مہاجر اہل قلم، اہل دانش جانے جاتے ہیں انہیں لنگڑا، لمبا اور کالیا بنا دیا۔ سوشل میڈیا پر کہا گیا کہ کراچی متحدہ کی لسانی سیاست کو مسترد کرتا ہے۔