احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے،کزن عمران

احسن اقبال کے بازو پرگولی لگی ہے،۔پولیس حکام جائے وقوعہ پرمعائنہ کررہے ہیں،وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال کے کزن کی گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ اتوار مئی 18:56

احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے،کزن عمران
اسلام آباد(اُردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔05مئی 2018ء) : وفاقی وزیرداخلہ احسن قبا ل پرنامعلوم افرادنے قاتلانہ حملہ کردیا،،احسن اقبال جلسے کے بعد واپس جارہے تھے کہ ان کی گاڑی پرفائرنگ کردی،اطلاعات ہیں کہ احسن اقبال کے بازو پرگولی لگی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال شکرگڑھ کی تحصیل کنجرورمیں عوامی جلسے سے خطاب کے بعد واپس جارہے تھے کہ ان پرنامعلوم ملزمان نے فائرنگ کردی۔

احسن اقبال کے کزن عمران کا کہنا ہے کہ احسن اقبال پرنامعلوم ملزمان نے فائرنگ کردی ہے۔۔احسن اقبال کے بازو پرگولی لگی ہے۔جس سے احسن اقبال شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ تاہم احسن اقبال کوہسپتال منقتل کردیا گیا ہے۔اور احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے۔اور خیریت سے ہیں۔کزن عمران کا کہنا ہے کہ احسن اقبال جب جلسہ کرکے باہر نکلے تھے توان کی گاڑی پرفائرنگ کردی۔

(جاری ہے)

احسن اقبال اپنی گاڑی میں بیٹھ ہی رہے تھے کہ ان پرفائرنگ کردی گئی۔گولی احسن اقبال کے بازور پرلگی ہے۔۔پولیس نے فائرنگ کے واقعے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔۔پولیس حکام جائے وقوعہ پرمعائنہ کررہے ہیں کہ فائرنگ کس طرف سے کی گئی ہے۔ملزمان کہاں سے آئے اور کتنے افراد تھے جنہوں نے احسن اقبا ل پرفائرنگ کی۔ تاہم احسن اقبال کے قریبی ساتھی عمران کا کہنا ہے کہ احسن اقبال کوہسپتال منقتل کردیا گیا ہے۔

اب احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے۔دوسری جانب ایک اطلاع کے مطابق جلسہ گالہ میں فائرنگ کرنے والے ایک ملزم کوحراست میں بھی لیا گیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ احسن اقبال پرفائرنگ کرنے کاواقعہ اس لیے پیش آیا کہ وہ مذہبی انتہا پسندی کے خلاف کھل کربات کرتے رہے۔ احسن اقبال فرنٹ پرآکر اور میڈیا پرانتشار پھیلانے والوں کیخلاف بات کرتے رہے۔