سندھ سولڈ ویسٹ منیجمنٹ بورڈ بلدیہ جنوبی اور بلدیہ شرقی کے 3ہزار ملازمین تاحال ماہ اپریل کی ماہوار تنخواہ کی ادائیگی سے محروم

اتوار مئی 19:11

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) میونسپل ورکرز ٹریڈ یونینز الائنس کے صدر سیدذوالفقارشاہ ،جنرل سیکریٹری ملک نواز نے کہا ہے کہ سندھ سولڈ ویسٹ منیجمنٹ بورڈ کے بلدیہ جنوبی اور بلدیہ شرقی کی3ہزار سے زائد ملازمین تاحال ماہ اپریل کی ماہوار تنخواہ کی مئی کا پہلا ہفتہ گذرنے کے باوجود ادائیگی سے محروم ہیں جبکہ طے شدہ معاہدے کے تحت 25فیصد اضافی الائونس کی ادائیگی بھی گذشتہ 10ماہ سے زیر التواء ہے ۔

اسی طرح بلدیاتی ملازمین کو سندھ سولڈ ویسٹ منیجمنٹ بورڈ کو اس شرط پر تسلیم کیا گیا تھا کہ انکی پیش کردہ 84نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ کو منظور کرکے 31سال سے حقوق سے محروم ملازمین کو حقوق ومراعات دی جائیں گی لیکن جولائی 2017سے مذاکراتی مکمل ہونے کے باوجود تاحال چارٹر آف ڈیمانڈ کو چیف سیکریٹری کی زیر صدارت بورڈ میٹنگ سے منظوری نہیں لی گئی ۔

(جاری ہے)

جس سے ملازمین میں بے چینی پائی جاتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ الائنس میں شامل یونینز نے بائیومیٹرک حاضری کی حمایت اس لیے کی ہے تاکہ حقیقی اور گھوسٹ ملازم کا کھوج لگایا جاسکے لیکن دوماہ سے بائیومیٹرک حاضری کا نظام رائج ہونے کے باوجود تنخواہوں کی ادائیگی میں تاخیر کی جارہی ہے ۔جس سے شرپسند عناصر کو بورڈ کے خلاف منفی پروپیگینڈہ کرنے میں آسانی ہورہی ہے ۔انہوں نے چیئرمین واٹر کمیشن سے اس سلسلے میں فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔

متعلقہ عنوان :