مغربی بائی پاس پر موٹر وے والوں نے ناجائز چالان کا بازار گرم کر رکھا ہے،رہنما بلوچستان گڈز ٹرک اونرز ایسوسی ایشن

نہ کوئی کانٹا ہے اور نہ ہی کوئی پیمائش ہے، اپنی مرضی سے ٹرکوں کو چالان دے رہے ہیں

اتوار مئی 19:20

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) بلوچستان گڈز ٹرک اونرز ایسوسی ایشن کے صدر نور محمد شاہوانی جنرل سیکرٹری صورت خان کاکڑ اور دیگر ٹرانسپورٹروں نے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ مغربی بائی پاس پر موٹر وے والوں نے ناجائز چالان کا بازار گرم کر رکھا ہے نہ کوئی کانٹا ہے اور نہ ہی کوئی پیمائش ہے، اپنی مرضی سے ٹرکوں کو چالان دے رہے ہیں اور روزانہ کی بنیاد پر ٹرانسپورٹروں سے لاکھوں روپے بٹور رہے ہیں اور ہم نے بار ہا موٹرو ے اور بلوچستان کے دیگر اعلیٰ حکام کو مختلف ذرائع سے آگاہ کیا گیا ہے مغربی بائی پاس کم چوڑا اور خستہ حال ہے اس پر ٹرکوں کو چالان دینا ناجائز ہے اور ہمارے ساتھ نا انصافی ہور ہی ہے اسی بائی پاس پر روزانہ حادثات ہو رہے ہیں اور قیمتی جانیں ضائع ہو ہرے ہیں جس کی وجہ سے مغربی بائی پاس پر ٹریفک کا بوجھ اور رش انتہائی زیادہ ہے ٹریفک کو کنٹرول کرنے کیلئے نا کافی ہے اسکو چوڑا کیا جائے اور موٹروے کا خستہ حال روڈ پر چالان کر نا غیر قانونی ہے چالان دینے سے پہلے ہمیں سہولیات دی جائے مغربی بائی پاس کو چھوڑا کیا جائے لہٰذا چیئرمین موٹر وے اور دیگر اعلیٰ متعلقہ حکام سے اپیل کر تے ہیں کہ موٹروے پولیس کے اس ناروا ناجائز حالات سے نجات دلائی جائے ورنہ احتجاج کی کال دیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری متعلقہ حکام پرعا ئد ہو گی۔