آزاد کشمیر کی موجودہ حکومت کی ناقص پالیسوں سے خطہ کے عوام کے مسائل میں اضافہ ہوا ہے‘تارکین وطن اور متاثرین منگلا ڈیم کے شہر میں غیر اعلانیہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے

سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف کی بات چیت

اتوار مئی 20:30

میرپور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) سابق معاون خصوصی وزیر اعظم آزاد کشمیر چودھری محمد اشرف نے کہا کہ آزاد کشمیر کی موجودہ حکومت کی ناقص پالیسوں سے خطہ کے عوام کے مسائل میں اضافہ ہوا ہے۔۔تارکین وطن اور متاثرین منگلا ڈیم کے شہر میں غیر اعلانیہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ جاری ہے ۔ سوئی گیس صرف چند سیکٹرز تک محدود ہے ۔ میرپور کو دانستہ نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

حکمران خواب خرگوش کے مزے لے رہے ہیں۔۔پاکستان میں نگران سیٹ اپ بنتے ہی آزاد کشمیر حکومت دباو میں آ جا ئے گی۔ وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان کی حکومت جون سے پہلے بجٹ پیش کرنا چاہتی ہے ۔ مسائل حل نہ ہوئے تو آزاد کشمیر حکومت بھی گھر جانے کی تیاری کر لے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

چودھری محمد اشرف نے کہا بجلی کی لوڈ شیڈنگ نے شہریوں کے مسائل میں اضافہ کر دیا ہے ۔

غیر اعلانیہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ کرنے والوں کو اپنے گریبانوں میں جھانکنا چاہیے جو بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا اعلان کرتے نہیں تھکتے تھے۔انہوں نے کہا آذاد کشمیر حکومت عوامی مسائل پر توجہ دے ورنہ گھر جانے کی تیاری کرئے خطہ کے عوام موجودہ حکومت کی پالیسوں سے عاجز آچکے ہیں مسائل کے انبار لگے ہوئے ہیں اور حکمران اقتدار کے مزے لینے میں مصروف ہیں ۔چودھری محمد اشرف نے کہا آزاد کشمیر حکومت پاکستان میں نگران سیٹ اپ بنتے ہی ان کی اصلیت اور گڈ گورننس کے ہوائی اعلانات اور جھوٹے دعووں کی قلعی کھل جائے گی۔