کوئٹہ میں کوئلے کی کان میں دھماکے سے 23کان کن جاں بحق ، 7افراد زخمی ہو گئے

کان کنوں کواجتماعی نماز جنازہ کے بعد سپردخاک کردیا گیا، جاں بحق ہونے والے افراد شانگلہ کے رہائشی تھے

اتوار مئی 20:30

ا لپوری(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 مئی2018ء) کوئٹہ میں کوئلہ کان میں دھماکے سے شانگلہ سے تعلق رکھنے والے 23کان کن جاں بحق جبکہ 7افرادساندہ گیس سے زخمی ہوگئی- میتوں کو شانگلہ پہنچادیا گیا جاں بحق ہونے والے کان کنوں کواجتماعی نماز جنازہ کے بعد سپردخاک کردیا گیا--جاں بحق ہونے والوں میں دو سگے بھائی ہیں۔ کوئلہ کان میں دھماکے میں زخمیوں 7مزدوروں کو کوئٹہ سول ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

ملبے تلے دبے کان کنوں ریسکیو آپریشن کے ذریعے نکالے گئے۔۔بلوچستان کے علاقے مارواڑ مارگٹ اور سپین کاریزپی ایم ڈی سی میں کوئلے کی کان میں گیس بھرجانے سے زوردار دھما کے ہوئے جس کی وجہ سے تین کانیں بیٹھ گئی، حادثات میں جاں بحق ہونے والے محنت کشوں کا تعلق شانگلہ سے ہے ۔ ہفتہ کے روزبلوچستان کے دو مختلف علاقوں میں بیک وقت کوئلہ کانوں میں دھماکے ہوئے پہلا دھماکہ بلوچستان کے دارولحکومت کوئٹہ سے ساٹھ کلومیٹر کے مسافت پر واقع مارواڑ مارگٹ میںتین کان بیٹھ جانے سے 16 کان کن جان سے ہاتھ دھو بیٹھے جبکہ اسی حادثے میں 7 محنت کش ساندہ گیس سے زخمی ہوگئے ہیں۔

(جاری ہے)

دوسرا حادثہ بھی بلوچستان کے دور رفتا علاقہ کاریز پی ایم ڈی سی میں ہوا جس کے نتیجے میں 7کان کن جاں بحق ہوگئے ہیں۔مارواڑ کاریز حادثات میں زخمیوں کو کوئٹہ کے سول ہسپتال منتقل کردیاگیا ہے۔شانگلہ سے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعباداللہ جائے حادثہ پہنچ گئے۔ رواں ماہ میں یہ بہت بڑا کوئلہ کان حادثہ میں بھی بدقسمی شانگلہ کے محنت کش لقمہ اجل بن گئے حادثہ میںجاں بحق افراد کا تعلق شانگلہ کے علاقوں زڑہ شلائوو،پیرآباد سے ہے۔ انتظامیہ کی طویل کوششو ں کے بعد میتوں کو نکالا گیا جس کی آبائی علاقوں میں اجتماعی نماز جنازہ کے بعد سپردخاک کر دیا گیا ۔