نواز شریف نے انتخابات سے قبل دو لوگوں کو مدت ملازمت میں توسیع دینے کا وعدہ کیا تھا

حامد میر نے ماضی کا ایک بڑا انکشاف کر دیا ،

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین پیر مئی 11:20

نواز شریف نے انتخابات سے قبل دو لوگوں کو مدت ملازمت میں توسیع دینے کا ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 مئی 2018ء) ::نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معرو ف صحافی حامد میر نے کہا کہ پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی عمر گزر گئی ہے کہ انہیں کوئی مشیر رکھنا چاہئیے یا نہیں رکھنا چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے برعکس نواز شریف کے بہت ایڈوائزر ہیں، ان کے ایک نہیں، دو نہیں، تین چار مشیر ہیں،اور اب تو ان کو محمود خان اچکزئی سے بھی بڑی نصیحتیں ملتی ہیں۔

عمران خان نے سے سراج الحق کو اپنا مشیر بنایا تھا لیکن اب وہ ان سے علیحدہ ہو گئے ہیں، انہوں نے شیر پاﺅ کو بھی بنایا تھا ،وہ بھی ان سے علیحدہ ہو گئے ہیں۔ عمران خان نے اپنی پارٹی کے 20،21 ایم پی ایز کو پارٹی سے نکال دیا ۔ اب ان کے پاس پیپلز پارٹی سے ایڈوائزرز آ رہے ہیں، جیسے ندیم افضل چن اور فردوس عاشق اعوان ان کے بہت اچھے ایڈوائزرز ہیں،ایسا لگ رہا ہے کہ پی ٹی آئی پیپلز پارٹی کا ایک فاروڈ بلاک بن گئی ہے یا پیپلز پارٹی کا جو حب الوطن گروپ تھا وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو گیا ہے۔

(جاری ہے)

اب نواز شریف نے جو نادیدہ قوتوں اور خلائی مخلوق کا الزام عائد کیا تھا اس کو کور کرنے کے لیے عمران خان نے بھی ان پر ایک کاﺅنٹر الزام عائد کر دیا ہے کہ 2103ء کے الیکشن میں فوج نے نواز شریف کی مدد کی تھی۔ آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ 2013ء کے الیکشن میں جو لوگ آزادانہ جیتے تھے ۔ 25،26 آزاد ایم این ایز کو مسلم لیگ ن میں بھیجا گیا تھا ، مسلم لیگ ن کو اضافی اکثریت چاپئیے تھی جس کے لیے آزاد اُمیدواروں کو پارٹی میں لایا گیا تھا ، شہباز شریف اور چودھری نثار علی خان کا خیال یہ تھا کہ جنرل اشفاق پرویز کیانی کو توسیع مل جائے گی ، نواز شریف نے ان کو توسیع دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن پھرنہ ان کو توسیع دی نہ افتخار محمد چوہدری کو توسیع دی۔

لیکن انہیں شہباز شریف اور چودھری نثار علی خان سے وعدہ نہیں کرنا چاہئیے تھا۔ حامد میر نے مزید کیا کہا آپ بھی دیکھیں: