عراقی جنگی طیاروں کی شام میں داعش کے ٹھکانے پر بمباری

دشیشہ نامی قصبے سے جنوب کی طرف ایک اہم ہدف کو نشانہ بنایا گیا،عراقی وزیراعظم کا بیان

پیر مئی 12:08

بغداد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) عراقی جنگی طیاروں نے خانہ جنگی کے شکار ہمسایہ ملک شام میں شدت پسند تنظیم داعش داعش کی قیادت کے ٹھکانے پر فضائی حملے کیے ۔ ان فضائی حملوں کی عراقی وزیر اعظم حیدر العبادی کے دفتر نے بھی تصدیق کر دی ہے۔

(جاری ہے)

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق وزیر اعظم حیدر العبادی کے دفتر کے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ ملکی ایئر فورس نے یہ کارروائی عراقی سربراہ حکومت کے حکم پر کی اور اس دوران شام میں داعش کے کمانڈروں کے ایک ٹھکانے پر بمباری کی گئی۔

بیان کے مطابق ان حملوں میں عراقی سرحد کے پار شام کے ریاستی علاقے میں دشیشہ نامی قصبے سے جنوب کی طرف ایک اہم ہدف کو نشانہ بنایا گیا۔ ان فضائی حملوں کی اس سے زیادہ تفصیلات نہیں بتائی گئیں۔ عراقی فضائیہ نے شام میں داعش کے ٹھکانوں پر گزشتہ برس بھی بمباری کی تھی لیکن اب کی جانے والی یہ کارروائی اس سال کے دوران اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے۔

متعلقہ عنوان :