ملک بھر میں تھیلیسیمیا کا عالمی دن کل منایاجائیگا

پیر مئی 14:25

ملک بھر میں تھیلیسیمیا کا عالمی دن کل منایاجائیگا
فیصل آباد۔7 مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) پاکستان سمیت دنیا بھر میں تھیلیسیمیا کا عالمی دن کل 8 مئی بروز منگل کو بھر پور طریقے سے منایا جائیگا۔اس سال اس دن کا تھیم’’ تھیلیسیمیا پاسٹ،پریزنٹ اینڈ فیوچر:ڈاکومنٹنگ پروگریس اینڈ پیشنٹس نیڈز والڈ وائیڈ‘‘ ہے۔ تھیلیسیمیا خون کی کمی کی ایک ایسی بیماری ہے جو والدین سے بچوں کو بذریعہ جنین منتقل ہوتی ہے،اس بیماری سے خون مین سرخ خلیے کمزور یا تباہ ہوتے رہتے ہیں جس کی وجہ سے مریض کو نئے خون کی اشد ضرورت رہتی ہے۔

ایک سروے کے مطابق دنیا میں 3.4% فیصد لوگ اس بیماری کے کیرئیر ہیں اور بھارت میں ہر سال تقریباً 7000 سے 10,000 بچے اس بیماری کے ساتھ پیدا ہو رہے ہیں ۔ تھیلیسیمیا کی کئی اقسام ہیں جن کی وجہ سے جسم کے مختلف عضو متاثر ہوتے ہیں ان میں الفا،بیٹا اور دوسری اقسام شامل ہیں۔

(جاری ہے)

بچوں میں تھیلیسیمیا کی موجودگی کے بارے ان کی عمر کے ابتدائی دوسال تک پتہ لگانا ممکن نہیں ہو پاتا کیونکہ اس کی علامات اس عمر میں ظاہر نہیں ہوتیں۔

عامی یوم تھیلیسیمیا کے موقع پر عالمی ادارہ صحت ،حکومت پاکستان ، محکمہ صحت پنجاب،، پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن ، اینٹی تھیلیسیمیا ایسوسی ایشن ، اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن ، سندس فائونڈیشن ، علی زیب بلڈ ٹرانسفیوژن سنٹر اور بچوں کی صحت کے حوالے سے کام کرنے والی بعض دیگر تنظیموں کے زیر اہتمام فیصل آباد ڈویژن سمیت مختلف ڈویژنل ہیڈ کوارٹرز اور بڑے شہروں میں خصوصی سیمینارز ، ورکشاپس، کانفرنسز، مذاکروں اور دیگر تقریبات کا انعقاد کیاجائیگا جبکہ اس موقع پر تھیلیسیمیا کے مرض کے بارے میں آگاہی و شعور پیداکرنے کی غرض سے مختلف بڑے شہروں میں خصوصی واکس بھی منعقد کی جائیں گی جن میں تھیلیسیمیا کے مرض کی وجوہات ، ابتدائی علامات ، بروقت تشخیص ، علاج معالجہ ، حفاظتی و تدارکی اقدامات اور دیگر متعلقہ امور کے بارے میں لوگوں کو روشناسی فراہم کی جائے گی۔

اس موقع پرتھیلیسیمیا کے مرض کا شکار بچوں کو علاج معالجہ کی بہترین سہولیات کی فراہمی کیلئے سفارشات بھی مرتب کی جائیں گی تاکہ بڑھتے ہوئے مرض پر قابو پانا ممکن ہو سکے۔ مذکورہ دن کے سلسلہ میں انسٹیٹیوٹ آف بلڈ ڈیزیز ز کے زیر اہتمام بھی خصوصی پروگرامات منعقد کئے جائیں گے ۔