احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم نے پستول کہاں سے خریدا؟ پستول لینے کے لیے پیسے کیسے جمع کیے؛ دوران تفیش اہم انکشافات کر دئیے

احسن اقبال پر حملہ کرنے کے لیےاپنے ہی علاقے کے ایک شخص سے 15 ہزار روپے میں پستول خریدی،ملزم کا بیان

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر مئی 13:51

احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم نے پستول کہاں سے خریدا؟ پستول لینے ..
لاہور(اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 مئی 2018ء) : وزیر داخلہ احسن اقبال پر حملہ کرنے والے ملزم نے پستول کہاں سے خریدا تھا ؟ پستول لینے کے لیے پیسے کیسے جمع کیے؛ دوران تفیش ملزم عابد حسین نے اہم انکشافات کر دئیے۔ملزم کا کہنا ہے کہ احسن اقبال پر حملہ کرنے کے لیےاپنے ہی علاقے کے ایک شخص سے 15 ہزار روپے میں پستول خریدی تھی۔قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق وزیرداخلہ احسن اقبال پرحملہ کرنے والے ملزم عابد حسین نے پولیس کو دیئے گئے بیان میں انکشاف کیا ہے کہ اس کا اصل ٹارگٹ احسن اقبال ہی تھے۔

حملے کے لیے اپنے ہی علاقے کے ایک شخص سے 15 ہزار روپے میں پستول خریدی تھی۔ پولیس کے مطابق ملزم سے برآمد کی گئی پستول میں 9 گولیاں تھیں،۔جب کہ حملے کے وقت ایک گولی چلاتے ہی عابد حسین کو ایلیٹ فورس کے جوانوں نے قابو کرلیا۔

(جاری ہے)

ملزم عابد حسین کے پولیس کو دئیے گئے بیان کے مطابق وہ دوپر 3 بجے ہی کارنر میٹنگ میں مسلح ہو کر بیٹھا تھا۔ملزم عابد حسین کا کہنا ہے کہ اس نے ایک تنظیم کے ڈھائی سو فارم فروخت کر کے پستول خریدنے کے لیے پیسے جمع کیے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال شکرگڑھ کی تحصیل کنجرورمیں عوامی جلسے سے خطاب کے بعدواپس جارہے تھے کہ ان پرنامعلوم ملزمان نے فائرنگ کردی۔ حملے کے فوری بعد احسن اقبال کے کزن عمران نے بتایا کہ احسن اقبال کے بازو پرگولی لگی ہے۔جس سے احسن اقبال شدید زخمی ہوگئے ہیں۔ تاہم احسن اقبال کوہسپتال منتقل کیا گیااور احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے۔اور خیریت سے ہیں۔بعض اطلاعات کے مطابق ملزم نے احسن اقبال پردو فائر کیے جس میں ایک گولی احسن اقبال کے دائیں بازور پرلگی ہے۔۔۔۔پولیس نے فائرنگ کے واقعے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے لیا تھا،اور جائے وقوعہ کامعائنہ کیاکہ فائرنگ کس طرف سے کی گئی ہے۔