احسن اقبال پر حملہ کروانے والا گھر کا بھیدی ہی نکلا!

وفاقی وزیر احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ پولیس نے نارووال میں منعقد کردہ جلسے کے میزبان کو گرفتار کر لیا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین پیر مئی 14:43

احسن اقبال پر حملہ کروانے والا گھر کا بھیدی ہی نکلا!
نارووال (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 مئی 2018ء) : گزشتہ روز وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال پر قاتلانہ حملہ کیا گیا۔ گولی احسن اقبال کے دائیں بازو اور پھر پیٹ پر لگی۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے مزید تفتیش کا آغاز کر دیا ہے۔ دوسری جانب میڈیا رپورٹ کے مطابق پولیس نے نارووال جلسے کے میزبان گلفام مسیح کو بھی گرفتار کر لیا ہے۔ گلفام مسیح نے کہا کہ ایم پی رمیش سنگھ کے کہنے پر پروگرام کا اہتمام کیا تھا۔

ملزم عابد کے قریبی دوست عظیم ولد اشرف کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔ عظیم ملزم عابد کے ہمراہ موٹر سائیکل پر سوار ہو کر آیا اور فائرنگ کے بعد جائے وقوعہ سے فرار ہو گیا تھا۔ میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا کہ دو ماہ قبل وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو ایک تقریب سے خطاب کے دوران جوتا مارنے والے بلال وارث نامی نوجوان کو بھی گرفتار کر کے شامل تفتیش کر لیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

پولیس نے ملزمان کو نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے۔ یاد رہے کہ گذشتہ روز وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال شکرگڑھ کی تحصیل کنجرورمیں عوامی جلسے سے خطاب کے بعدواپس جارہے تھے کہ ان پرنامعلوم ملزمان نے فائرنگ کردی تھی۔ ڈی پی اوناروال عمران کشور کاکہنا ہے کہ فائرنگ کرنے والا شخص مقامی ہے ،انکوائری جاری ہے۔ ملزم نے 15گز کے فاصلے سے گولی چلائی،وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال کا سروسز اسپتال میں آپریشن مکمل کیا گیا۔

اور اب وزیر داخلہ احسن اقبال کو سرجیکل آئی سی یو میں رکھا گیا ہے۔ ایم ایس ڈاکٹر محمد امیر نے کہا کہ احسن اقبال کی حالت خطرے سے باہر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ احسن اقبال کے دو آپریشن کیے گئے ۔ ان کو چند روز اسپتال میں ڈاکٹرز کی نگرانی میں رکھا جائے گا جس کے بعد انہیں اسپتال سے ڈسچارج کر دیا جائے گا۔