چین کا مشرق وسطی کی صورتحال پر اظہار تشویش، خطے میں امن و مذاکرات کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں ، گونگ شیاو شنگ

امیدہے متعلقہ ممالک مذاکرات سے تنازعات اور اختلافات کو جل از جلد حل کر سکیں گے،چین کے خصوصی کا بیان

پیر مئی 15:40

بیجنگ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) چین نے مشرق وسطی کی صورتحال پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین مذکورہ خطے میں امن و مذاکرات کو فروغ دینے کا خواہاں ہے، امیدہے متعلقہ ممالک سیاسی مذاکرات کے زریعے تنازعات اور اختلافات کو جل از جلد حل کر سکیں گے۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق مشرق وسطی کے امور کے حوالے سے چین کے خصوصی ایلچی گونگ شیاو شنگ نے مشرق وسطی کی صورتحال پر گہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ چین مذکورہ خطے میں امن و مذاکرات کو فروغ دینے کا خواہاں ہے۔

چینی مندوب نے سعودی عرب کی وزارت خارجہ میں سیاسی اور اقتصادی امور کے حوالے سے نائب انڈرسیکرٹری جنرل جمال عقیل سے ریاض میں ملاقات کے دوران مذکورہ خیالات کا اظہار کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ شام میں سول خانہ جنگی اور عدم استحکام ، فلسطین اور اسرائِیل کے درمیان تنازعات ،،یمن میں خانہ جنگی اور ایران کے جوہری معاہدے سے متعلق معاملات کے باعث مشرق وسطی میں امن اور استحکام شدید خطرات سے دوچار ہے۔

(جاری ہے)

گونگ نے کہا کہ چین نے مذکورہ خطے کی پیچیدہ صورتحال پر انتہائی توجہ دی ہے۔انہوں نے کہا کہ مشرق وسطی ممالک کے ایک دوست کی حیثیت سے چین یہ امید کرتا ہے کہ متعلقہ ممالک مشرق وسطی میں امن و استحکام کا ادراک کرتے ہوئے سیاسی مذاکرات کے زریعے تنازعات اور اختلافات کو جل از جلد حل کر سکیں گے۔