بھارتیوں نے ظلم کی انتہا کر دی؛ علاج کے لیے بھارت جانے والی 33 سالہ خاتون کو زیادتی کانشانہ بنا دیا گیا

33 سالہ آئر لینڈ کی خاتون کو قتل کر کے لاش جنگل میں لٹکا دی گئی

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر مئی 15:48

بھارتیوں نے ظلم کی انتہا کر دی؛ علاج کے لیے بھارت جانے والی 33 سالہ خاتون ..
بھارت (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 مئی 2018ء) : 33 سالہ غیر ملکی خاتون کو بھارت میں زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔33 سالہ لیگا بھارت علاج کی غرض سے گئی۔33 سالہ لیگا بھارت کے شہر کاریلا میں اپنی بہن کے ساتھ گئی۔لیگا آئر لینڈ کی رہنے والی تھی۔اور کئی ہفتوں سے لاپتہ تھی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق لیگا نامی خاتون جس نے اپنے ڈپریشن کا علاج کرنے کے لئے بھارت کا سفر کیا تھا۔

خاتون کو بھارت میں شدید تشدد کا نشانہ بنایاگیا۔اور خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنانے سے پہلے اسے منشیات بھی دی گئیں۔اور بعد ازاں اس کی لاش کو جنگل میں لٹکا دیا گیا تھا۔33 سالہ لیگا پانچ سال سے آئرلینڈ میں اپنے شوہر کے ساتھ رہ رہیں تھیں۔لیگا اپنی بہن کے ساتھ ڈپریشن کے علاج کے لیے بھارت پہنچی تھی۔

(جاری ہے)

غیر ملکی خاتون اس امید کے ساتھ بھارت آئی تھی کہ اس کا بھارت میں مکمل علاج کیا جائے گا۔

لیکن بھارت پہنچنے پر خاتون کے ساتھ زیادتی کی گئی اور اسے قتل کر دیا گیا۔خاتون بہت عرصے سے لاپتہ تھی۔خاتون کی تخریب شدہ لاش 21 اپریل کو بھارت کے شہر کے ایک جنگل میں پائی گئی۔۔پولیس نے جس روز خاتون کے قتل ہونے کا انکشاف کیا اسی روز یورپ میں خاتون کا جنازہ پڑھایا گیا تھا۔رپورٹ میں یہ بھی لکھا گیا ہے کہ خاتون کو دو افراد کی طرف سے منشیات دی گئیں اور پھر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

خاتون کے ساتھ زیادتی کے شبے میں دو مشتبہ افراد کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔یاد رہے کہ اس سے پہلے بھی کئی ایسی خبریں سامنے آ چکی ہیں کہ جس میں بھارت جانے والے غیر ملکیوں کے ساتھ ناروا سلو کیا جاتا ہے۔اور بھارت جانے والی غیر ملکی خواتین کو بھی ہراساں کیا جاتا ہے۔۔بھارت میں خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات کی بھی کئی خبریں سامنے آتی ہیں جس میں کم عمر بچیوں کو بھی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے اور پھر انہیں قتل کر دیا جاتا ہے۔