بھارتی سکول میں تقسیم کی جانے والی کتاب کے سرورق پر پاکستانی پرچم اور تصویر نے ہنگامہ کھڑا کردیا

بہار کے وزیراعلی نتیش کمار نے پاکستانی پرچم کے ساتھ بچی کی تصویر نوٹ بک پر شائع ہونے کی تحقیقات کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی

پیر مئی 18:07

نئی دلی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) بھارتی ریاست بہار میں اسکول میں تقسیم کی جانے والی کتاب کے سرورق پر پاکستانی پرچم اور بچی کی تصویر نے نیا ہنگامہ کھڑا کردیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق 'بیٹی بچاو بیٹی پڑھاو' مہم کے تحت ریاست بہار میں تقسیم کردہ کتابچے کے سرورق پر پاکستانی پرچم اور لڑکی کی تصویر شائع کی گئی تھی، جس کی نشاندہی پر ریاستی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔

(جاری ہے)

اسکول کی کتاب کے سرورق پر اسکول کے یونیفارم میں ملبوس پاکستانی بچی پاکستان کا قومی پرچم بنا رہی ہے۔ ریاستی حکومت نے 5 ہزار نوٹ بک شائع کیں جسے پٹنہ سپرب انٹرپرائزز کی جانب سے علاقے کے تمام اسکولوں میں تقسیم کیا گیا۔بعدازاں معاملے کا علم ہونے پر کتابوں کی تقسیم کا عمل روک دیا گیا۔دوسری جانب تصویر کی نشاندہی ہونے کے بعد ریاست بہار کے وزیراعلی نتیش کمار نے پاکستانی پرچم کے ساتھ بچی کی تصویر نوٹ بک پر شائع ہونے کی تحقیقات کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی۔ڈسٹرکٹ کوارڈینیٹر برائے صحت و صفائی سدھیر کمار کا کہنا ہے کہ پاکستانی پرچم اور بچی کی تصویر نوٹ بک کے سرورق پر چھپنا غلطی ہے۔ ۔

متعلقہ عنوان :