سرگودھا، عام انتخابات کے حوالے سے حلقہ بندیوں میں ہونیوالی جیوگرافیائی تبدیلی کے پیش نظر پولنگ سکیم کا فارمولہ طے کرنے کے ساتھ انتظامات کو حتمی شکل دینے کا آغاز

پیر مئی 20:15

سرگودھا(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) سرگودھا سمیت پنجاب بھر میں آئندہ عام انتخابات کے حوالے سے حلقہ بندیوں میں ہونیوالی جیوگرافیائی تبدیلی کے پیش نظر پولنگ سکیم کا فارمولہ طے کرنے کے ساتھ ساتھ انتظامات کو حتمی شکل دینے کا آغاز کر دیا گیا، ذرائع کے مطابق سرگودھا سمیت پنجاب بھر میں قومی اسمبلی کی141جبکہ صوبائی اسمبلی کی297حلقوں کے لگ بھگ 5کروڑ 64 لاکھ ووٹرزہیں،اور 12سو ووٹرز کیلئے ایک پولنگ اسٹیشن بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ،اس طرح پنجاب بھر میں 50ہزار پولنگ اسٹیشن قائم کرنے کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں، طے شدہ فارمولے کے مطابق ہر پولنگ آبادی کے قریب ترین قائم کیا جائے گا جو ایک کلو میٹر تک کے ووٹرز کو کور کریگا،جبکہ الیکشن کمیشن نے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ کے ذریعے سروے کروا کرپنجاب بھر کے 639ایسے پولنگ اسٹیشنوں کی نشاندہی کی ہے جو بنیادی سہولیات چار دیواری تک سے محروم ہیں ان کی تعمیر و مرمت کیلئے مجموعی طور پر 2ارب 37کروڑ40لاکھ روپے کے فنڈز کی ڈیمانڈ فنانس ڈیپارٹمنٹ کو ارسال کر دی گئی ہے ،دوسری جانب مئی کے پہلے ہفتے میں ضلعی الیکشن کمشنرز کو ووٹرز کی آن لائن تصدیق کا عمل مکمل کرنے اور الیکشن کے انتظامات ٹرانسپوٹیشن، سٹیشنری وغیرہ کی مد میں مطلوبہ اخراجات کی ڈیمانڈ بھجوانے کی بھی ہدایت جاری کر دی گئی ہے ،اورآئندہ ماہ کیبنٹ سب کمیٹی کے ممبران تمام اضلاع کے انتظامی افسران سے الیکشن انتظامات کے حوالے سے ویڈیو لنک خطاب کرینگے ۔