بھارتی فوج کے ہاتھوں کشمیر یوں کے بے دردی قتل عام پر سخت تشویش ہے،راجہ محمد فاروق حیدر

دنیا نے دیکھ لیا نہتے کشمیری بھارت کی سفاکیت اور جارحیت کے سامنے سینہ تان کر کھڑے ہیں،دنیا کشمیری عوام کے خلاف سنگین بھارتی اقدامات کا نوٹس لیں،وزیر اعظم آزادکشمیر کا بیان

پیر مئی 20:46

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) آزادجموں وکشمیر کے وزیراعظم راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر میں کشمیری شہریوں کا جس بے دردی سے قتل عام کر رہی ہے اس پر سخت تشویش ہے۔ شوپیاں میں پروفیسر رفیق بٹ سمیت 13 افراد کی ٹارگٹ کلنگ کی گئی جس کا مقصد تحریک آزادی کے جانبازوں کو خوفزدہ کرنا ہے۔۔دنیا نے دیکھ لیا کہ نہتے کشمیری بھارت کی سفاکیت اور جارحیت کے سامنے سینہ تان کر کھڑے ہیں۔

بھارتی فوج کی جانب سے کیمیائی ہتھیاروں سے حملے،سرچ آپریشن میں چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کرنا ،محاصرے ،گھر گھر تلاشی ،پیلٹ گنز کا بے دریغ استعمال بھارت کی جمہوریت پر لگنے والے کلنک کے ٹیکے ہیں۔۔دنیا کو بتانا چاہتے ہیں کہ کشمیری عوام کے خلاف سنگین بھارتی اقدامات کا نوٹس لیں، یاسین ملک ، سید علی گیلانی ،،میر واعظ عمر فاروق ،سید شبیر شاہ سمیت حریت رہنماؤں نے اپنی زندگی کا بیشتر حصہ قید میں گزارا ان کی بے مثال جدوجہد کو سلام پیش کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

مقبوضہ وادی کے اندر نوجوانوں کا ماورائے قتل کیا جارہا ہے ، آئے روز نوجوانوں کو شہید کرنا معمول بن گیا ہے ، گزشتہ روز بھی نوجوانوں کو شہید کیا گیا۔۔وزیراعظم نے ان خیالات کا اظہار اپنے ایک بیان میں کیا۔ راجہ محمد فاروق حیدر خان نے کہا کہ بھارت کے وزیراعظم مودی درندگی کا استعارہ بن چکے ہیں جن کا چہرہ کشمیریوں کے خون سے رنگا ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت ایک منظم مائنڈ سیٹ کے ساتھ کشمیریوں کی نسل کشی کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ تمام تر ظلم و بربریت کے باوجود بھارت کشمیریوں کا جذبہ آزادی کم نہیں کر سکا۔۔وزیراعظم نے کہا کہ لندن میں کشمیریوں نے انتہائی منظم انداز میں بھارتی وزیراعظم مودی کے خلاف زبردست مظاہرہ کر کے یہ پیغام دے دیا ہے کہ وہ غاصب بھارتی تسلط میں کسی صورت نہیں رہیں گے اور اپنی تحریک آزادی سے ایک انچ پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کی جانب سے کرفیو اور گولیوں کی بوچھاڑ میں کشمیری شہداء کو سبز ہلالی پرچم میں دفن کیا گیا جس سے عیاں ہو چکا کہ خوف اور ڈر اب کشمیریوں کے دلوں سے نکل چکے۔راجہ فاروق حیدر نے کہا کہ کشمیریوں کی منزل پاکستان ہے اور انہیں اس منزل کو حاصل کرنے میں ذرا برابر بھی شک نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کشمیریوں کی نسل کشی کے لئے اب بدترین سطح پر اتر آئی ہے جس کیلئے اس نے کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال بھی شروع کر دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ان حملوں سے زخمی کشمیریوں کی زندگیاں انتہائی خطرے کا شکا رہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج اس طرح کے سفاکانہ اقدامات کے باوجود بھی بھارت کشمیریوں کے جذبہ حریت کو نہ تو دبا سکا ہے نہ ہی ان کو جھکا سکا ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کے دلوں میں پاکستان کی محبت ہے اس لئے بھارتی فوج کی گولیوں کی بوچھاڑ میں بھی بہادر کشمیری سبز ہلالی پرچم لہراتے اور بلند کرتے رہتے ہیں۔

وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہاکہ شبیر احمد شاہ 31 سال سے بھارتی فوج کی قید میں زندگی اور موت کی کشمکش میں ہیں انسانی حقوق کی تنظیمیں شبیر احمد شاہ کی زندگی کو درپیش خطرات کا ادراک کریں اور ان کی حفاظت کو یقینی بنانے کیلیے اقدامات کریں۔انہوں نے کہا کہ شبیر احمد شاہ کی مسلسل قید اور ان کا ہمالیہ جیسا حوصلہ ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔