آئندہ مالی سال کے دوران آزادکشمیر کی آمدن اور اخراجات کو برابر لانے کے لیے ہدف مقرر کیا جائے گا،وزیر اعظم آزادکشمیر

پیر مئی 20:48

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) وزیراعظم آزاد حکومت ریاست جموں وکشمیر راجہ محمد فاروق حید رخان نے کہا ہے کہ آئندہ مالی سال کے دوران آزادکشمیر کی آمدن اور اخراجات کو برابر لانے کے لیے ہدف مقرر کیا جائے گا ،پونے دو سال کے عرصہ میں حکومت نے ریاستی آمدن میں ریکارڈ اضافہ کیا اور غیر ترقیاتی اخراجات میں معقول کمی لائی ہے آزادکشمیر کے وسائل میں اضافہ اولین ترجیحات میں شامل ہے اس مقصد کے لیے تمام تر وسائل بروئے کار لائے جائیں گے ،کوشش ہے کہ آزادکشمیر کو مالیاتی طور پر خود کفیل بنانے کے لیے ذرئع آمدن بڑھائیں ،لیگی کارکنان ہمارا سرمایہ ہیں ، کارکنان کی محبت نے ہی مجھے اس منصب تک پہنچایا، آزادکشمیر میںمسلم لیگ ن کے پاس سیاسی کارکنوں کی بہترین ٹیم موجود ہے۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے مسلم لیگ ن ضلع باغ کے صدر مشتاق نیئر کی قیادت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کے دوران کیا اس موقع پر وزیر تعمیرات عامہ چوہدری محمد عزیز ،ڈائریکٹر جنرل سیاسی امور وزیراعظم سیکرٹریٹ ملک ذوالفقار بھی موجود تھے وفد سے گفتگو کے دوران وزیراعظم آزادکشمیر کا کہنا تھا کہ میری عزت کارکنان کے ساتھ ہے کارکن باعزت ہیں تو میں بھی با عزت ہوں میر ی خواہش ہے کہ پانچ سال کے بعد جب وزارت عظمیٰ کے منصب سے جائوں تو میرے کارکنوں کو کوئی یہ طعنہ نہ دے کہ ان کے وزیراعظم نے کوئی غلط کام کیا یا عوام کی خدمت نہیں کی انہوں نے کہاکہ بلدیاتی انتخابات کے بعد سیاسی کارکنوں کو مزید با اختیار بنائیں گے وزیراعظم کمیونٹی انفراسٹریکچر پروگرام اس لیے شروع کیا گیا ہے کہ سیاسی کارکنان نے مقامی سطح پر جو وعدے کر رکھے ہیں انہیں پورا کیا جا سکے اور عوام الناس کو ان کے گھروں کی دہلیز تک بنیادی سہولیات میسر ہوں وزراء اور ممبران اسمبلی کو ہدایت کر رکھی ہے کہ وہ کارکنان کی شکایات کا ازالہ کریں اور کارکنان کو ساتھ لے کر چلیں انہوں نے کہا ہے کہ آزادکشمیر کے اندر ریکارڈ ترقیاتی بجٹ آیا جس سے آزاد کشمیر بھر کی عوام بلا تخصیص مستفید ہو رہی ہے وفاق میں مسلم لیگ ن کی حکومت نے نہ صرف آزادکشمیر کے ترقیاتی بجٹ میں دوگنا اضافہ کیا بلکہ تاریخ میں پہلی مرتبہ آزادکشمیر کو ترقیاتی بجٹ بروقت مہیا کیا گیا آزادکشمیر کو ترقیاتی بجٹ کی بروقت فراہمی پر قائد پاکستان میاں محمد نواز شریف کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے وزارت عظمیٰ سے الگ ہونے کے باوجود آزادکشمیر کے ساتھ محبت اور شفقت کا سلسلہ جاری رکھا اور جہاں کہیں پریشانی ہوئی انہوں نے بھرپور تعاون کیا۔

وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ حکومت عوام کی بلاتخصیص خدمت کے لیے کوشاں ہے ریاست پر عوام کا اعتماد بحال کرنے کے لیے جاندار اقدامات اٹھائے گئے ہیں میرٹ کی بحالی کے لیے غیر جاندار پبلک سروس کمیشن کا قیام عمل میں لایا گیا ہے اور این ٹی ایس کا نفاذ کیا گیا ہے لوگوں کو ان کی دہلیز پر بنیادی سہولیات کی فراہمی کے لیے کمیونٹی انفراسٹریکچر پروگرام شروع کیا گیا ہے عوام الناس کو بروقت انصاف کی فراہمی کے لیے فیملی کورٹس قائم کی گئیں ہیں مقدمات بروقت یکسو کرنے کے لیے پالیسی ترتیب دی جا رہی ہے تاکہ عوام کو بروقت انصاف کی فراہمی ممکن ہو سکے، انہوں نے کہا کہ پونے 2سال کے عرصہ میں حکومت نے جو تاریخی اور مشکل اقدامات اٹھائے ان میں لیگی کارکنان نے ہر اول دستے کا کردار ادا کیا اور حکومت کا ساتھ دیا یہی وجہ ہے کہ آزادکشمیر کے اندر تعلیم یافتہ نوجوانوں کو میرٹ پر ملازمتیں مل رہی ہیں ترقیاتی منصوبوں سے ہر آدمی مستفید ہو رہا ہے آزادکشمیر کے اندر اصلاحات اور وعدوں کی تکمیل کے لیے اقدامات جاری رکھیں گے ۔

راٹھور*