لیاقت آباد فلائی اوور پر جلسہ کسی سیاسی جماعت کو جواب نہیں تھا،صرف اپنی قوم کو تحفظ کا احساس دلانا تھا، آفاق احمد

مہاجر عوام خود کو تنہا محسوس نہ کریں، جلسے کے ذریعے مہاجر عوام کو یکجا کیا،ذولفقار علی بھٹو نے سندھ کو دو لسانی حصوں میں تقسیم کیا، پریس کانفرنس

پیر مئی 22:48

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد نے کہا ہے کہ لیاقت آباد فلائی اوور پر جلسہ کسی سیاسی جماعت کو جواب نہیں تھا۔صرف اپنی قوم کو تحفظ کا احساس دلانا تھا۔ پیر کواپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے آفاق احمد نے کہا کہ لیاقت آباد فلائی آور جلسے میں عوام نے بڑی تعداد میں شرکت کرکے ثابت کردیا لوگ مہاجر قومی موومنٹ کے ساتھ ہیں ۔

ہم نے جلسہ کسی کو جواب دینے کے لئے نہیں کیا ہمارا جلسہ پی پی اور ایم کیو ایم کے جلسے سے پہلے طے تھا۔ہم نے سیاسی ہم آہنگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے جلسہ کا دن تبدیل کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ ضلع وسطی کی عوام کا شکر گزار ہوں جو انہوں نے بھر پقر ساتھ دیا ۔مہاجر عوام خود کو تنہا محسوس نہ کریں۔

(جاری ہے)

ہم نے جلسے کے ذریعے مہاجر عوام کو یکجا کیا۔ذولفقار علی بھٹو نے سندھ کو دو لسانی حصوں میں تقسیم کیا ۔

کوٹہ سسٹم کی حمایت سندھ اور شہری تقسیم برقرار رکھنے کے لئے شہری اور دہی تقسیم جنوبی سندھ صوبہ کی بنیاد ہوگا۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کے جلسے سے یہ تاثر دینے کی کوشش کی جارہی ہے کہ کراچی میں قبضہ کرنے کوشش ہے۔یہ عمل شہر کے امن کے لئے نقصان دہ ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ شہر بہت مشکل سے امن کی طرف گامزن ہے اور اب لوگ ایک دوسرے کے نظریات کو سمجھنا چاہتے ہیں ۔

پاکستان کے سیکورٹی کے اداروں نے قربانی دے کر امن قائم کیا ۔۔پیپلز پارٹی نے ایسا تاثر دیا کہ وہ لیاقت آباد فتح کرنے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے بھی لسانی بنیاد پر جلسے کیے ۔وہ پختونوں کو جمع کرکے جلسے کرتے ہیں۔دونوں جماعتیں گلشن اقبال میں جلسہ کرنے کے لیے باضد ہیں ۔دوسرے علاقوں کو لے جاکر اگر کہییں جلسہ کیا جائے تو وہاں کے لوگ غیر محفوظ محسوس کرتے ہیں ۔