راولپنڈی،ٹرانسپورٹ کا شعبہ سونے کا انڈا دینے والی مرغی ہے ، سید دلاور گردیزی

ڈیزل ، پیٹرول ، ٹال ٹیکس پلازوں پر چالانوں اور بھاری ٹریفک چا لان جرمانوں کی صورت میں کروڑوں روپے سرکاری خزانے کو جا رہے ہیں، لاکھوں ٹرانسپورٹ ورکرز کو کوئی بھی ریلیف نہیں دیا جا ہا ہے ، مرکزی جنرل سیکرٹری آل پاکستان پبلک ٹرانسپورٹورکرز یونین

پیر مئی 23:41

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) آل پاکستان پبلک ٹرانسپورٹورکرز یونین کے مرکزی جنرل سیکرٹری سید دلاور گردیزی نے کہا ہے کہ ٹرانسپورٹ کا شعبہ سونے کا انڈا دینے والی مرغی ہے حکومت انڈے کھائے مرغی نہ کھائے کروڑوں روپے مختلف ٹیکسوں کی مد میں حکومت کو جارہے ہیں ڈیزل ، پیٹرول ، ٹال ٹیکس پلازوں پر چالانوں اور بھاری ٹریفک چا لان جرمانوں کی صورت میں کروڑوں روپے سرکاری خزانے کو جا رہے ہیں لیکن لاکھوں ٹرانسپورٹ ورکرز کو کوئی بھی ریلیف نہیں دیا جا ہا ہے انٹر سٹی روٹس پر بھی ڈرائیوروں کے آرام کے لئے کوئی بندوبست نہیں ہے اور نہ ہی ان کو کوئی علاج معالجے کی سہولیات میسر ہیں جبکہ وارڈن پولیس والے بھی بے جا تنگ کرتے ہیں ان خیا لات کا اظہارانہون نے جنرل بس اسٹینڈ پیر ودھائی میںٹرانسپورٹروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہو ئے کیا ہے اجلاس سے راجہ کا مران سترہ میل والے حبیب اللہ خان نیازی ، سید نثار حسین شاہ ، امداد اللہ گوندل منڈی بہائوالدین ، تاج زمین خان صوابی ، راجہ خاور ، راجہ کامران ، اورنگ زیب را ٹھور،رفاقت گجر اورفیصل ترک نے بھی خطاب کیا انہوں نے کہا ہے کہ آئے روز ڈیزل اور ٹرانسپورٹ کی قیمتوں میں اضافہ سے اخراجات اس قدر بڑھ گئے ہیں کہ ہمارے لئے پہیہرواں رکھنا مشکل ہو گیا ہے اسلئے حکومت اس شعبہ کو ریلیف دے اور سہولیات بھی دے انہوں نے کہا ہے کہ احالیہ بجٹ میںسپئیر پارٹس اور پیٹرولیم مصنوعات میں اضافہ بلا جواز کیا گیا ہے ا س حوالے سے ٹرانسپورٹ تنظیموں سے کوئی مشاورت نہیں کی گئی ہے اور نہ ہی ان کو اعتماد میں لیا گیا ہے انہوں نے کہا ہے کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ ٹرانسپورٹرز کے حوالے سے کوئی بھی فیصلہ لینے سے قبل ٹرا نسپورٹ نمائندوں کو اعتماد میں لیا جا ئے انہوں نے کہا ہے کہ ہم پاک فوج اور عدلیہ پر مکمل یقین رکھتے ہیں اور ان سے اپیل کرتے ہیں کہ ٹرانسپور ٹ شعبہ کے لئے کوئی پالیسی بنا ئی جا ئے تا کہ ہمیں بھی ریلیف مل سکے ۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :