مردم شماری 2017 کے نتائج لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج

پیر مئی 23:44

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) مردم شماری 2017 کے نتائج کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا گیا ۔ عدالت نے نوٹس جاری کرتے ہوئے الیکشن کمیشن اور محکمہ مردم شماری سے 22 مئی کیلئے نوٹس جاری کردیئے ۔ جسٹس سید مظاہر علی اکبر نقوی نے رانا علم الدین غازی ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر درخواست پر سماعت کی ۔

(جاری ہے)

درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ مردم شماری میں پنجاب میں قومی اسمبلی کی نشستیں 148 سے کم ہوکر 141 رہ گئی ہیں،دیگر صوبوں کی قومی اسمبلی کی نشستیں بڑھ گئی ہیں، صوبے کی آبادی کے تناسب سے قومی اسمبلی کی نشستیں نہیں دی گئیں، نظریہ ضرورت کے تحت ماضی میں حکومتیں قائم کی گئیں، درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت نئی مردم شماری کرانے اور حلقہ بندیاں کروانے کا حکم دے۔

عدالت نظریہ ضرورت کے تحت دس سال کیلئے جوڈیشل حکومت قائم کرنے کا حکم دے۔