واٹر ورکس فیز فور سے آدم شاہ واٹر ٹینک کو پانی سپلائی کرنیوالی پائپ لائن مکمل طور پر خستہ حال ہوچکی ہے ،نئی لائن ڈلوائی جائے، صدر بندھانی برادری

منگل مئی 00:00

سکھر۔ 7مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) بندھانی برادری کے صدر حاجی شریف بندھانی نے کہا ہے کہ واٹر ورکس فیز فور سے آدم شاہ واٹر ٹینک کو پانی سپلائی کرنیوالی پائپ لائن 35سے 40سال پرانی ہونے کے باعث مکمل طور پر خستہ حال ہوچکی ہے، اس لئے مہینے میں 3سے 4بار ناکارہ ہوجاتی ہے اور علاقے میں پانی کا بحران شدت اختیار کرلیتا ہے، جتنی رقم مذکورہ پائپ لائن کی مرمت پر خرچ کی جاچکی ہے اس سے آدھی رقم میں نئی پائپ لائن بچھائی جاسکتی تھی، جن علاقوں سے پائپ لائن گزر رہی ہے وہاں لوگوں کی بڑی تعداد نے اپنے گھر قائم کررکھے ہیں، وزیر اعلیٰ سندھ و دیگر اعلیٰ حکام نوٹس لیکر نئی پائپ لائن ڈلواکر علاقہ مکینوں کے مسائل حل کریں۔

جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق وہ اپنے دفتر میں شہریوں اور علاقہ مکینوں کے وفود سے بات چیت کررہے تھے۔

(جاری ہے)

اس موقع پر حاجی مسلم، حافظ شعیب، حاجی یامین، عبدالجبار راجپوت ودیگر بھی موجود تھے۔ حاجی شریف بندھانی نے کہاکہ انتظامیہ نئی پائپ لائن بچھانے کے بجائے خستہ حال پائپ لائن کی مرمت کرکے کام چلارہی ہے، مرمت کی جانیوالی لائن ناکارہ ہونے سے نواں گوٹھ، گرم گودی، شکارپور پھاٹک، شمس آباد، تیر چوک، آدم شاہ کالونی سمیت دیگر علاقوں میں پینے کے پانی کا بحران شدت اختیار کرلیتا ہے، جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑہا ہے۔

انتظامیہ کو متعدد بار درخواستیں دی گئیں کہ اس پائپ لائن کو مکمل طور پر تبدیل کرکے نئی پائپ لائن بچھائی جائے مگر انتظامیہ ہر بار اسی لائن کی مرمت کردیتی ہے اور پھر چند دن گزرنے کے بعد یہ لائن دوسرے مقام پر دوبارہ سے ناکارہ ہوجاتی ہے۔ انہوں نے کمشنر سکھر ڈویژن، میئر سکھر ودیگر اعلیٰ حکام سے اپیل کی کہ نوٹس لیکر آدم شاہ واٹر ٹینک کو پانی سپلائی کرنیوالی خستہ حال لائن کو تبدیل کرکے فوری طور پر نئی پائپ لائن بچھائی جائے تاکہ مکینوں کو درپیش مشکلات میں کمی واقع ہوسکے اور انہیں ضرورت کے مطابق پانی کی فراہمی یقینی بنائی جاسکے۔

متعلقہ عنوان :