شاہ سلمان ریلیف مرکز کی یمن کے لیے ڈبلیو ایچ او کے ذریعے آکسیجن اسٹیشنوں کی امداد

عالمی ادارہ صحت ادویہ ، طبی سامان ، ایندھن ، پانی اور آکسیجن ترجیحی بنیاد پر اسپتالوں کو بھیج رہا ہے،بیان

منگل مئی 12:18

ریاض(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) سعودی عرب کے شاہ سلمان انسانی امداد مرکز نے عالمی ادارہ صحت ( ڈبلیو ایچ او) کے ذریعے یمن کے جنوبی شہر عدن میں زندگی بچانے والے گیارہ آکسیجن اسٹیشنز مہیا کردئیے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق ڈبلیو ایچ او کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہاگیاکہ یہ گیس اسٹیشن سعودی عرب کی امدادی تنظیم کی مہیا کردہ امداد سے ہی یمن بھیجے جاسکے ہیں ۔

ان میں سے سات عدن کی بندرگاہ پر پہنچ چکے ہیں اور اب متعلقہ اسپتالوں میں ان کی تنصیب کا کام باقی رہ گیا ہے۔۔یمن میں ڈبلیو ایچ او کے نمائندے ڈاکٹر نیویو زاگاریا نے اس خبر پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جنگ زدہ ملک میں مراکزِ صحت میں بنیادی سہولتوں اور ضروریات کا فقدان ہے۔عالمی ادارہ صحت ادویہ ، طبی سامان ، ایندھن ، پانی اور آکسیجن اسٹیشنوں کی طرح کے آلات ترجیحی بنیاد پر اسپتالوں کو بھیج رہا ہے۔

(جاری ہے)

ڈبلیو ایچ او اب ان نئے آنے والے اسٹیشنوں کی تنصیب کے لیے عدن میں گیارہ نئے آکسیجن اسٹیشن گھروں کی تعمیر کی منصوبہ بندی کررہا ہے ۔زندگی بچانے والے ان آلات کی متحدہ عرب امارات کی انجمن ہلال احمر ، او ایف ڈی اے اور عالمی بنک کی معاونت سے تنصیب کی جائے گی۔۔ڈاکٹر زاگاریا کا کہنا تھا کہ یمن میں جاری لڑائی کو چار سال ہونے کو ہیں اور یمنی عوام کو بنیادی حفظانِ صحت کی خدمات تک رسائی نہیں ہے۔ملک کے نصف سے زیادہ مراکز صحت اور اسپتال مکمل یا جزوی طور پر تباہ ہوچکے ہیں،یا وہ فعال نہیں رہے ہیں اور اب پہلے سے کہیں زیادہ لوگ کا وبائی امراض کا شکار ہونے کا خدشہ ہے۔