عرب اتحادی لڑاکا طیاروں کی حوثی باغیوں مورچہ بند ٹھکانوں پر شدید بمباری،22باغی ہلاک،متعدد زخمی

لڑاکا طیاروں نے باغیوں کے زیر کنٹرول وزارت دفاع اور وزارت داخلہ کی عمارتوں کو نشانہ بنایا،حکام

منگل مئی 15:50

صنعائ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) یمن کے دارالحکومت صنعاء میں عرب اتحاد کے طیاروں نے باغی حوثی ملیشیا کے زیر کنٹرول وزارت دفاع اور وزارت داخلہ کی عمارتوں کو نشانہ بنایا،جس کے نتیجے میں 22 باغی ہلاک اور متعدد افراد زخمی ہو گئے،لڑاکا طیاروں نے کتاف،باقم،ملاحیط اور میدی کے محاذوں پر حوثی ملیشیا کے مورچہ بند ٹھکانوں پر بھی درجنوں حملے کیے۔

(جاری ہے)

منگل کو عالمی نشریاتی ادارے کے مطابق یمنی دارالحکومت صنعاء میں عرب اتحاد کے طیاروں نے باغی حوثی ملیشیا کے زیر کنٹرول وزارت دفاع اوروزارت داخلہ کی عمارتوں کو نشانہ بنایا۔اتحادی افواج کے لڑاکا طیاروں نے کتاف، باقم، ملاحیط اور میدی کے محاذوں پر حوثی ملیشیا کے مورچہ بند ٹھکانوں پر بھی درجنوں حملے کیے۔جس کے نتیجے میں22 باغی ہلاک اور متعدد زخمی بھی ہوئے۔دوسری جانب یمن کی سرکاری فوج کے میڈیا سینٹر نے صعدہ کے مشرق میں کتاف کے محاذ پر پیش قدمی اور کتاف ضلعے کے مراکز پر دھاوے کی تصدیق کی ہے،یمنی فوج کو باقام میں آل صبحان اور ابوبا کے علاقوں پر مکمل کنٹرول حاصل ہو گیا ہے۔