علماء کرام رمضان المبارک میں امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کیلئے اپنا کلیدی کردار ادا کر یں،ڈی پی او

منگل مئی 16:10

سرگودھا۔08مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) رمضان المبارک کی آمد آمد ہے ،اللہ تمام مسلمانوں کو اس بابرکت مہینے کے ثمرات سے نوازے ۔لوگوں کو ترغیب دیں کہ کسی بھی مشکوک شخص یا چیز کو نظر انداز نہ کیا جائے تاکہ کسی بھی ناگہانی واقعہ سے بچا جاسکے ۔ ان خیالات کا اظہار ڈی پی اومحمد سہیل چوہدری نے رمضان المبارک کے سلسلہ میں امن کمیٹی کے ممبران سے میٹنگ کے دوران کیا ۔

میٹنگ میں قاری احمد علی ندیم، میاں عبدالجبا، محمد عمر فاروق، وقار احمد عثمانی ،خالد اقبال مسرت ، سید صادق حسین ، میاں طاہر محمود، قاری عبدالوحید، مولانا اکرم طوفانی، ریاست علی فیروزی ،بشیر حسین، سید احمد زیدی ، نعیم اسلم کپور اور دیگر مکتبہ فکر میںسے سید حسن طاہر کرمانی نے شرکت کی ۔

(جاری ہے)

ڈی پی اونے کہا کہ موجودہ ملکی حالات کے تناظر میں سکیورٹی کے حوالہ سے پولیس کی ذمہ داریاں بہت بڑھ گئی ہیں ۔

سرگودھا پولیس رمضان المبارک کا سیکورٹی پلان تیار کر رہی ہے جس میں محدود وسائل اورکم نفری کے ساتھ ہم نے زیادہ سے زیادہ پولیس افسران و ملازمان کو مساجد ، امام بارگاہوں اور اقلیتی عبادت گاہوں پر تعینات کئے جائیں گے تاکہ لوگوں میں سیکورٹی کے حوالہ سے زیادہ سے زیادہ تحفظ کا احساس اجاگر ہو ۔ لیکن اس کے ساتھ ساتھ آپ علماء کرام کو بھی آگے بڑھ کر کلیدی کردار ادا کرنا ہو گا تاکہ کسی بھی تخریب کاری کے واقعہ سے بچا جا سکے ، آپ کو چاہیے کہ ہر مسجد پر رضاکارانہ طور پر ایسے لوگوں کی ڈیوٹی لگائیں جو مسجد میں آنے والے ہر شخص کی چیکنگ کرکے مسجد کے اند ر داخل ہو نے دیں،ایسے رضاکاروں کو پولیس ضروری تربیت دے گی، اس کے علاوہ پنجاب میں ساؤنڈ سسٹم آرڈیننس 2015 ء نافذ العمل ہے لہذا کوئی ایسا فعل نہ کیا جائے جو اس آرڈیننس کے منافی ہو، آخر پر شرکاء میٹنگ کی جانب سے دی جانے والی آراء پر ڈی پی او سرگودھا نے تما م ضلع کے ایس ایچ اوز کو ہدایات جاری کیں کہ تھانہ کی سطح پر بھی امن کمیٹی کے ممبران ودیگر مکاتب فکر سے میٹنگ کی جائے ۔