غلہ منڈیوں کی شہر سے باہر منتقلی کے وعدے ایفاء نہ ہو سکے ،تاجر برادری مسائل کا شکار،

اندرون شہر ٹریفک مسائل کے حل کے لیے کمیٹی تشکیل، آٹھ یوم میں رپورٹ طلب کر لی گئی

منگل مئی 16:30

راولپنڈی08مئی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) ڈپٹی کمشنر راولپنڈی طلعت گوندل نے ٹریفک مسائل کے حل کے لیے کمیٹی تشکیل دے کر آٹھ یوم میں رپورٹ طلب کر لی ۔مر کزی انجمن تا جرا ن راولپنڈی کے صدر شر جیل میر نے ’’اے پی پی‘‘ کو بتایاکہ اندرو ن شہر ٹریفک مسا ئل کی وجہ سے کا رو با ر پر پڑ نے والے منفی اثرا ت کے با رے میں راولپنڈی کی ضلعی انتظامیہ کو آگاہ کرنے کے لیے مرکزی انجمن تاجران کے وفدنے گذشتہ روز ڈپٹی کمشنر راولپنڈی طلعت محمو د گو ندل سے ملا قا ت کی اور انہیں ٹریفک روانی میں حائل رکاوٹوں کی بدولت لاحق مسائل سے آگاہ کیا ۔

اس موقع پر ڈی ایس پی ٹریفک پو لیس تیمو ر خا ن بھی مو جو د تھے ۔ وفد میں مر کزی انجمن تا جرا ن راولپنڈی کینٹ کے صدر زاہد بختا وری ،شیخ محمد صدیق ،چو ہدری اقبا ل احمد ،چو ہدری امتیا ز ،طا ہر تا ج بھٹی ،انجمن تا جرا ن غلہ منڈی کے میا ں عمرا ن صا دق ،گڈز ایسوسی ایشن کے صدر میا ں فیاض ،شیخ سہیل ،شکیل قریشی ،ظفر اقبا ل ،چو ہدری تنویر ،ملک عمر ،لا لا یعقو ب ، شیخ محمد سلیم ،خا لد ببن ، سر دا ر پر ویز،یا سر مغل و دیگر مو جو د تھے۔

(جاری ہے)

شر جیل میر نے ڈپٹی کمشنر کو آگا ہ کیا کہ انتظامیہ نے تاجروں سے غلہ منڈیوں کی شہر سے باہر منتقلی کا وعدہ کیا تھا جس پر تاحال عمل در آمد نہیں کیا جاسکا۔شرجیل میر نے کہاکہ ایک طرف تو انتظامیہ غلہ منڈیوں کی شہر سے باہر منتقلی کے اقدامات میں ناکام رہی ہے تو دوسری جانب مال بردار گاڑیوں کو اندرون شہر ایک دن بعد داخلے کی اجازت دی جاتی ہے جس کی وجہ سے نہ صرف ٹرا نسپور ٹرز کا معا شی قتل ہو رہا ہے بلکہ تا جرو ں کو سامان کی بر وقت ترسیل نہ ہونے سے کاروبار تباہ ہو رہے ہیں ۔

اس لئے مال بردار گا ڑیو ں کے بروقت داخلے کو ممکن بنا یا جا ئے اورٹریفک وارڈنز کو ہدا یت کی جا ئے کہ وہ اندرو ن شہر ٹریفک مسا ئل کو حل کریں۔تاجر وفد کی اپیل پر ڈی سی راولپنڈی نے اے سی سٹی ،ڈی ایس پی ٹریفک تیمو ر خا ن،انجمن تا جرا ن غلہ منڈی کے میا ں عمرا ن صا دق ،گڈز ایسو سی ایشن کے میا ں فیا ض اور مر کزی انجمن تا جرا ن راولپنڈی کے جنرل سیکر ٹری طا ہر تا ج بھٹی پر مشتمل ایک کمیٹی تشکیل دیتے ہو ئے ٹریفک مسا ئل اور شہر میں گا ڑیو ں کے دا خلے با رے تفصیلی رپورٹ آٹھ دنو ں میں پیش کر نے کی ہدا یت کر دی ۔

متعلقہ عنوان :