پیپلز پارٹی لیڈز کے نوجوان متحرک رہنما ساجد محمود پیپلز پارٹی ویسٹ یارکشائر برطانیہ کے نائب صدر نامزد

منگل مئی 17:58

لیڈز(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) پیپلز پارٹی لیڈز کے نوجوان متحرک رہنما ساجد محمود پیپلز پارٹی ویسٹ یارکشائر برطانیہ کے نائب صدر نامزد۔ساجد محمود کا تعلق حلقہ دو اسلام گڑھ چکسواری کے علاقے ایسر سے ہے۔ان کی نامزدگی پر لیڈز برطانیہ سمیت حلقہ دو اسلام گڑھ چکسواری میں جشن کا سامان،،پیپلز پارٹی کے رہنمائوں کی ساجد محمود کو مبارکبادیں۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی لیڈز برطانیہ کے نوجوان اور محنتی کارکن ساجد محمود آف ایسر کو پیپلز پارٹی ویسٹ یارکشائر کا نائب صدر نامزد کر دیا گیا۔ان کی نامزدگی پر جیالوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔ساجد محمود کی نامزدگی پر پیپلز پارٹی برطانیہ کے مرکزی نائب صدر ساجد علی قریشی،نائب صدر پیپلز پارٹی ضلع میرپور چوہدری ناظم حسین،نمبردار شفیق چوہدری،ڈپٹی سیکرٹری جنرل ضلع میرپور حاجی چوہدری اقبال ڈھلوی،سابق ایڈمنسٹریٹر بلدیہ حاجی عظیم بھٹی،چوہدری لقمان لیاقت ،ٹھیکیدار چوہدری سرفراز احمد نے خوشی اور مسرت کا اظہار کرتے ہوئے ساجد محمود کو مبارکباد جبکہ پارٹی کی مرکزی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ساجد محمود نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی پاکستان کی واحد سیاسی جماعت ہے جس نے پارٹی کے نظریاتی کارکنوں کو ہمیشہ اولیت دی اور انہیں پارٹی کے کلیدی عہدوں پر ایڈجسٹ کیا۔پارٹی چیرمین بلاول بھٹو زرداری،،محسن باری سمیت دیگر اعلیٰ قیادت کا مشکور ہیں کہ جنہوںنے میرے کندھوں پر بھاری ذمہ داری ڈالی انشاء الله قیادت کی رہنمائی میں پیپلز پارٹی کو برطانیہ میں ہراول دستہ بنانے کے لئے بھرپو رجدوجہد کروں گا۔

انہوںنے کہا کہ پیپلز پارٹی نے ہمیشہ پاکستان اور پاکستان کے غریب عوام کی خوشحالی و ترقی کے لیے جدوجہد کی اور پیپلز پارٹی کے قائدین شہید ذوالفقار علی بھٹو اور شہید بے نظیر بھٹو نے پاکستان اور پاکستان کی عوام کی خاطر اپنی جانوں کو قربان کیا اور آج کے مضبوط اور طاقتور پاکستان کو بھٹو شہید نے ناقابل تسخیر نیو کلیئر پروگرام کا وہ انمول تحفہ دیا جس کا ثانی کوئی نہیں بھٹو شہید کی بیٹی دختر مشرق دنیا اسلام کی پہلی خاتون وزیر اعظم شہید بے نظیربھٹو نے میزائل پروگرام کی داغ بیل ڈالنے اور اسے جدید تر بنانے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی اور ایک مربوط نظام دے کر گئیں، بی بی شہید کی موت کے بعد ان کے شوہر آصف علی زرداری نے پاکستان کی انقلابی ترجیحات کی بنیاد پر بھٹو اور بی بی کے مضبوط اور مستحکم پاکستان کے ادھورے خواب کو آگے بڑھاتے ہوئے پاکستان میں معاشی انقلاب لانے کے لیے ہمسایہ ملک چین کے ساتھ مل کر سی پیک کا وہ بے مثال اور دنیا کی نظروں میں پاکستان کو مستقبل میں ترقی کے اعتبار سے صف اول کے ممالک میں لا کھڑا کر دینے والا منصوبہ شروع کیا جبکہ دوسری جانب ڈکٹیٹروں اور ان کے لے پالک سیاسی یتیموں نے صرف ملک کو تباہی،، بدنامی اور مفلسی کی طرف نہ صرف دھکیلا بلکہ دنیا میں جگ رسائی کا پوراسامان فراہم کرتے اور اس کا ایندھن بننے کا پورا پورا ذریعہ بنے لیکن انشااللہ 2018کے انتخابات میں پاکستان پیپلز پارٹی واضع برتری حاصل کرکے پاکستان میں دوبارہ عوامی جمہوری کو حکومت قائم کرنے، معاشی انقلاب برپا کرنے، پاکستا ن اور پاکستان کے غریب عوام کی فلاح و بہبود کے لیے عملی اقدامات کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھے گی۔