جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کا سیز فائر لائن پر کشمیریوں کے قتل عام کو فوری بند کرنے کا مطالبہ

کل صابر شہید سٹیڈیم میں راولاکوٹ میں جلسے کا انعقاد کرکے تحریک کو ازسر نو سائنسی بنیادوں پر آگے بڑھانے کا اعلان

منگل مئی 21:46

راولاکوٹ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) جموں کشمیر لبریشن فرنٹ نے سیز فائر لائن پر کشمیریوں کی قتل عام کو فوری طور پر بند ، سیز فائر لائن سے ملحق 5کلو میٹر علاقے کو آبادی سے خالی کروانے کا منصوبہ ترک ،،جموں کشمیر کے عوام پر مسلط سامراجی و پراکسی جنگوں کو بند کرتے ہوئے معاہدہ کراچی اور ایکٹ چوہتر کی منسوخی کرکے ایک آئین ساز اسمبلی کے قیام کا مطالبہ کردیا ہے ، اپنے مطالبات کے حق میں جے کے ایل ایف نے کل دس مئی کو صابر شہید سٹیڈیم میں راولاکوٹ میں ایک بڑے جلسے کا انعقاد کرکے تحریک کو ازسر نو سائنسی بنیادوں پر آگے بڑھانے کا اعلان کردیا ان خیالات کا اظہار جے کے ایل ایف کے چیئرمین محمد صغیر خان نے راولاکوٹ میں میڈیا کو دی جانے والی بریفنگ میں کیا انھوں نے آزادکشمیر میں بجلی کو بڑھتی لوڈشیڈنگ کو سامراجی سازش قرار دیتے مطالبہ کیا کہ آزادکشمیر اور جی بی میں پیدا وار کے حامل تمام بجلی یونٹوں کو فوری طور پر جی بی اور مظفر آباد کی عوام کے حوالے کرتے انھیں اجتماعی ملکیت دی جائے ہر شہری کو مفت بجلی مہیا کی جائے اس کے ساتھ ریاست کے دونوں خطوں کی عوام پر مسلط تمام سامراجی ٹیکسز بشمول پراپرٹی ٹیکس ود ہولڈنگ ٹیکس ویلیو ایڈڈ ٹیکس اور جنرل سیلز ٹیکس کو ختم کیا جائے بیروں ملک محنت کش کشمیریوں کے خون پسینے سے کمائے گئے زرمبادلہ کو عوام کی اجتماعی ملکیت میں دیا جائے جہاد کے نام پر بنی نام نہاد مگر دہشت گرد تنظیموں کی کشمیر کے تمام خطوں میں سرگرمیاں بند کی جائیں صحت اور بنیادی جدید سائنسی تعلیم کی سہولیات ہر شہری کو مفت مہیا کی جائیں طلبہ یونین سے پابندی ہٹا کر فوری طور الیکشن کروائے جائیں محنت کشوں کے تمام حقوق تسلیم کیے جائیں خواتین کو مردوں کے برابر تعلیم اور روزگار کی سہولت دی جائے تمام بیروزگاروں کو رجسٹرڈ کرکے بے روزگاری الاؤنس دیاجائے محنت کشوں کی تنخواہ کم ازکم ایک تولہ سونے کی برابر کی جائے تحریر وتقریر کی آزادی فراہم کرتے میڈیا اخبارات اور دیگر تصانیف پر عائد پابندیاں فورا ختم کی جائیں جموں کشمیر بشمول لداخ اور جی بی کے لوگوں کو غیر مشروط حق خود اداریت بشمول حق علیحدگی دیا جائے