بھارتی قتل وغارت کیخلاف احتجاج کیلئے کشمیری (کل) بازئوں پر سیاہ پٹیاں باندھیں ،جھنڈے لہرائیں، مشترکہ مزاحمتی قیادت

11مئی کو نمازجمعہ کے بعد شوپیان اور سرینگر کے شہداء کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کی جائیگی

منگل مئی 22:04

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) مقبوضہ کشمیر میںمشترکہ مزاحمتی قیادت نے ملازمین ، وکلاء ، اساتذہ ، تاجروں اور ٹرانسپوٹروں سمیت زندگی کے تمام شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں سے کہاہے کہ وہ پورے مقبوضہ علاقے میں نہتے کشمیریوں کے قتل عام اور خونریزی کے خلاف غم و غصے کے اظہار کیلئے (آج)9مئی کو بازئوں پر سیاہ پٹیاں باندھیںاور اپنے گھروں ، دکانوں اور گاڑیوں پر سیاہ جھنڈے لہرائیں۔

کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق سید علی گیلانی ،میرواعظ عمرفاروق اور محمد یاسین پر مشتمل مشترکہ مزاحتمی قیادت نے سرینگر میں جاری ایک بیان میںتمام مساجد، درگاہوں اور امام باڑوں کے ائمہ اور خطیبوں پر زوردیا ہے کہ وہ جمعہ کو نماز کے بعد شوپیان اور سرینگر میں گزشتہ ہفتے شہید ہونے افراد کی غائبانہ نماز جنازہ ادا کریں اور مشترکہ مزاحمتی قیادت کی قرارداد پیش کرکے عوام کی تائید حاصل کریں۔

(جاری ہے)

مزاحمتی رہنمائوں نے آج شہید ہونے والے سترہ سالہ نوجوان سفیل احمد بٹ کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ ان معصوم شہداء کی بے لوث قربانیاں ناقابل فراموش ہیں۔ سفیل احمد بٹ اتوار کو شوپیان میں بھارتی فورسز کی فائرنگ سے شدید زخمی ہوا تھا اور تین دن تک سرینگر کے ایس ایم ایچ ایس ہسپتال میں موت وحیات کی کشمکش میں رہنے کے بعد آج صبح زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ عام شہریوں اور مجاہدین کی شہادت پر وادی کشمیر میں مشترکہ حریت قیادت کی کال پرگزشتہ تین روز سے ہڑتال ہے۔