مذہبی لوگ ریاست اور پاکستان سے وفادار ہیں،مولانا فضل الرحمان

ہماری معیشت پر مغربی دنیا کی اجاراداری ہے ،آزادی کی باتیں کرنے والے مغربی ایجنڈے کو تقویت دیتے ہیں غلامانہ ذینیت کی وجہ سے امریکا کی بالادستی قائم ہے،ہمیں کسی سے وفاداری کے سرٹیفیکیٹ کی ضرورت نہیں ہے

منگل مئی 23:03

مذہبی لوگ ریاست اور پاکستان سے وفادار ہیں،مولانا فضل الرحمان
پشاور،کرک(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ ہماری معیشت پر مغربی دنیا کی اجاراداری ہے ،آزادی کی باتیں کرنے والے مغربی ایجنڈے کو تقویت دیتے ہیں، ستر سال پاکستان کے بیت چکے ہیں لیکن آج بھی مذہب بیزار قوتیں پاکستان پر قابض ہیں۔

(جاری ہے)

کرک میں غلبہ تہذیب کانفرنس کے جلسے سے خطاب میں جمعیت علماء اسلام اور ایم ایم اے کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو ستر سال ہوگئے لیکن آج بھی مذہب سے بے زار قوتیں قابض ہیں،کفری نظام کے پیروکار یورپی اور بے حیائی کا نظام لانا چاہتے ہیں،،امریکہ کو پیغام دیناہے کہ انکی تہذیب نہیں اسلامی نظام کو چاہتے ہیں،بے حیائی کو جوانوں کی خواہشات کا نام دیا جا رہا ہے،اسلام میں سود، شراب، فحاشی کو حرام قرار دیا گیا ہے اور آج ان خرافات کو روشن خیالی سے جوڑا جا رہا ہے،مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ مذہبی لوگ ریاست اور پاکستان سے وفادار ہیں،غلامانہ ذینیت کی وجہ سے امریکا کی بالادستی قائم ہے،ہمیں کسی سے وفاداری کے سرٹیفیکیٹ کی ضرورت نہیں ہے،مولانا فضل الرحمان نے کے پی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت تعلیمی اداروں پرجنس پرستی کا نشان لگا کریہودی آقاوں کوخوش کرنا چاہتی ہے،آنے والے الیکشن میں ان یہودی ایجنٹوں کو نکال باہر کرنا ہوگا،،امریکہ کو پیغام دیناہے کہ انکی تہذیب نہیں اسلامی نظام کو چاہتے ہیں۔