خدمات تک رسائی کا قانون حق حقدار کے حوالہ کرنے کیلئے قانونی جواز فراہم کرتا ہے۔ چیف کمشنر آر ٹی ایس خیبر پختونخوا

منگل مئی 23:18

اوگی۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) چیف کمشنر آر ٹی ایس خیبر پختونخوا مشتاق جدون نے کہا ہے کہ خدمات تک رسائی کا قانون 2014ء مقررہ معیاد کے اندر حق حقدار کے حوالہ کرنے کیلئے قانونی جواز فراہم کرتا ہے، خیبر پختونخوا حکومت کا یہ قانون خدمات تک رسائی کی ضمانت ہے، شہریوں کو مقررہ معیاد میں خدمات کی فراہمی سرکاری اداروں کی ذمہ داری ہے جو اس میں دانستہ غفلت کا ارتکاب کر رہے ہیں، ایسے افراد کے خلاف تادیبی کارروائی اور جرمانہ کی سزا ہے۔

وہ منگل کو اے سی آفس ہال اوگی میں آر ٹی ایس قانون کے حوالہ سے بلدیاتی ممبران، ٹی ایم اے اور دیگر محکموں کے اہلکاروں کی آگاہی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ تقریب سے اے سی اوگی شبیر خان، تحصیل ناظم اوگی راجہ بشیر، ٹی ایم او سید آفتاب الاسلام شاہ، ویلج ناظمین، کونسلرز اور سرکاری اہلکاروں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

(جاری ہے)

سوال و جواب کا سیشن بھی ہوا۔

مشتاق جدون نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اپنے شہریوں کو محکمہ مال، پولیس،، ٹی ایم اے، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ، زکوٰة، صحت اور دیگر محکموں میں مختلف نوعیت کی 16 خدمات تک رسائی کا مقررہ وقت میں عمل درآمد کا اختیار دیا ہے، یہ خدمات تمام دفاتر میں نمایاں جگہ میں چارٹ کی شکل میں آویزاں ہیں جن سے استفادہ کرنا ہر شہری کا قانونی حق ہے جو کوئی بھی متعلقہ محکمہ خدمات تک رسائی کے قانون کے تحت بلاوجہ تاخیر اور رکاوٹ کا سبب بنے گا تو اس کے متعلقہ آفیسر کیلئے محکمانہ کارروائی سمیت جرمانہ کی سزا بھی موجود ہے، جرمانے کا معقول حصہ شکایت کنندہ کو مہیا کیا جائے گا۔