جعفرآباد ، رمضان شریف کی آمد سے قبل ہی دکانداروں نے اشیاء خوردونوش ازخود مہنگی کردیں ،پرائس کنٹرول کمیٹی غیر فعال

منگل مئی 23:45

جعفرآباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 مئی2018ء) رمضان شریف کا استقبال کرنے کیلئے دکانداروں نے آستین چڑھاکر اشیاء خوردونوش ازخود مہنگی کردیں ،پرائس کنٹرول کمیٹی غیر فعال ہوگئی ہے یوٹیلٹی اسٹوروں پر بازار کے مقابل ریٹوں میں چالیس سے پچاس روپے اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے یوٹیلٹی اسٹور ویران ہوگئے عام آدمی کی زندگی پر کیا اثرات پر رہے ہیں حکومت تاحال عوام کو سبسٹڈی دینے میں بھی ناکام نظر آرہی ہے ،رمضان شریف برکتوں رحمتوں وعظمتوں کا مہینہ ہے لیکن تاجربرادری نے اسے منافع بخش مہینہ تصور کرلیا ہے جعفرآباد کی مارکیٹون میں رمضان کی آمد کا استبال کرنے کے لیئے دکانداروں نے آستینیں چڑھا دی ہیں کھانے پینے کی تمام اشیئا ازخود مہنگی کردی ہیں جن میں آٹا دال چاول چائے میٹھی مشروبات پھل سبزیوں مچھلی گوشت دہی دودھ کی قیمتیں آسمان سے باتیں کررہی ہیں اس بارے میں دکانداروں کا کہنا ہے کہ پرائس کنٹرول کمیٹی نے ابتک قیمتوں کے نرخ مقرر نہیں کیئے ہیں پچھلے سال کی ریٹ لسٹوں پر کاروبار چل رہا ہے شہر کی مارکیٹیوں میں عوام کا رش دیکھنے میں نظر آرہا ہے لیکن شہری قیمتیں سن کر دکانوں سے باہر نکل آتے ہیں شہریوں کا کہنا ہے کہ جعفرآباد میں انتظامیہ کو عوام سے کوئی سروکار نہیں ہے سستے بازاروں کا کوئی منصوبہ نظر نہیں آتا شہر میں لوٹ مار کابازار گرم ہے :ایک طرف عام مارکیٹیوں میں من مانی قیمتیں دوسری جانب یوٹیلٹی اسٹوروں میں بھی روزمروز کی اشیئا مارکیٹوں سے دوگنا بک رہی ہیں عام آدمی کا کوئی پرسان حال نہیں ہے حکومت کے سبسڈی کے دعوے کہاں تک درست ہیں اس کاجواب دینے والا کوئی نہیں ہے لہذہ حکومت کو چاہئے کہ فلفور یوٹیلٹی اسٹوروں کی جانب توجہ دیکر عام کھانے پینے کی اشئیا کو عام آدمی کے دسترس میں پہنچایا جائے اور ضلعی انتظامیہ ر مضان سے قبل پرائس لسٹیں آوایزاں کریں اور قریبی ڈیلرز جیکب آباد سے نئی لسٹیں لیکر ڈیرہ اللہ یار میں مقرر کی جائیں ۔

متعلقہ عنوان :