شہید محترمہ بینظیر بھٹو میڈیکل یونیورسٹی کی جانب سے تھیلیسیمیا کا عالمی دن منایا گیا

بدھ مئی 00:20

لاڑکانہ ۔ 8 مئی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) شہید محترمہ بینظیر بھٹو میڈیکل یونیورسٹی کی جانب سے تھیلیسیمیا کا عالمی دن منایا گیا۔ اس موقع پر شیخ زید وومن اور چلڈرین اسپتالوں میں تقاریب کا انعقاد کیا گیا جس میں تھیلیسیمیا کے متاثر بچوں اور ان کے والدین نے شرکت کی جبکہ تھیلیسیمیا سینٹر میں چانڈکا میڈیکل کالج کے 400 طلبہ، ملازمین اور اساتذہ نے تھیلیسیمیا کے مرض میں مبتلا بچوں اور مریضوں کے لیے خون کے عطیے بھی دیئے۔

دوسری جانب شیخ زید وومن اسپتال میں تھیلیسیمیا کے عالمی دن کے موقع پر سیمینار کا انعقاد کیا گیا جس میں یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر غلام اصغر چنہ، رجسٹرار افسر بھٹو، ڈین پروفیسر رفیعہ بلوچ، پروفیسر سیف اللہ جامڑو، کمشنر محمد عباس بلوچ، ڈپٹی کمشنر عمران علی، پروفیسر حبیب الرحمن قادری، عبدالحمید شیخ، پروفیسر فوزیہ کاشف، پروفیسر شاہدہ مگسی، پروفیسر احسان اللہ ملک، انور علی، ڈاکٹر اکبر بھٹو، ڈاکٹر عبدالوحید میمن، انجنیئر روشن علی شیخ، ڈاکٹر عدنان وہاب قریشی، میڈیا کوآرڈینیٹر عبدالصمد بھٹی اور دیگر نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

اس موقع پر مقررین نے تھیلیسیمیا کے مرض اور اس سے بچاؤ کے متعلق تفصیلی آگاہی اور کہا کہ تھیلیسیمیا کا مرض موروثی بھی ہے، خاندان میں شادیاں کروانے سے قبل تھیلیسیمیا ٹیسٹ کروائی جائے کیونکہ تھیلیسیمیا مائنر کے متاثر والدین کو تھیلیسیمیا میجر کے بچے پیدا ہوسکتے ہیں جس کے لیے ضرورت ہے کہ حاملہ خواتین بھی ٹیسٹ کروائیں۔ اس موقع پر انہوں نے ڈاکٹروں کی جانب سے تھیلیسیمیا کے مرض میں مبتلا بچوں اور مریضوں کے لیے خون کا عطیہ دینے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

متعلقہ عنوان :