کراچی یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے صحافیوں کیمرہ مینوں اور فوٹو گرافر ز پر تشدد کے واقعات کی مذمت

بدھ مئی 13:26

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) کراچی یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے مختلف سیاسی جماعتوں کی حالیہ سرگرمیوں کے دوران صحافیوں کیمرہ مینوں اور فوٹو گرافر ز پر تشدد کے واقعات کی مذمت کی گئی۔ کے یو جے نے کمشنر کراچی کی جانب سے صحافیوں کے ساتھ توہین آمیز سلوک کی بھی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی۔ کراچی یونین آف جرنلسٹس کے صدر حسن عباس اور جنرل سیکرٹری عاجز جمالی نے بدھ کوجاری بیان میں کہا ہے کہ گذشتہ روز گلشن اقبال کے حکیم محمد سعید گرائونڈ پر دو سیاسی جماعتوںکے درمیان جلسہ کے تنازعہ پر فرائض انجام دینے والے رپورٹرزکیمرہ مین اور فوٹوگرافرز کے ساتھ نہ صرف توہین آمیز رویہ اختیار کیا گیا بلکہ تشدد بھی کیا گیا بعض کیمرہ مینوں سے کیمرے چھیننے کی کوشش کی گئی مشکل حالات میں اپنے فرائض کی ادائیگی کے دوران صحافیوں اور کیمرہ مینوں پر تشدد جیسی حرکات سمجھ سے بالاتر ہیں۔

(جاری ہے)

کے یو جے نے 6 مئی کو لیاقت آباد فلائی اوور پر ایک سیاسی جماعت کے جلسے میں بھی صحافیوں کے ساتھ توہین آمیز سلوک کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ بیان میں کہا گیا کہ حقیقی کے ذمے داروں نے ہمارے کچھ صحافی ساتھیوں کو دھمکیاں بھی دی گئیں جو انتہائی تشویش ناک ہے۔ اس کے علاوہ آٹھ مئی کو کمشنر کراچی نے اپنے دفتر میں کوریج پر جانے والے صحافیوں اور کیمرہ مینوں کے ساتھ جو توہین آمیز رویہ اختیار کیا گیا اس کی کے یو جے نے شدید مذمت کرتی ہے اور آئندہ اس قسم کے واقعات کو دہرانے سے گریز کیا جائے دوسری صورت میں صحافیوں کی نمائندہ تنظیم کراچی یونین آف جرنلسٹس ہر قسم کے احتجاج کا حق رکھتی ہے۔