علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی"حقوق ملکیت دانش "کے موضوع پر قومی سمینار

بدھ مئی 13:33

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی کے آفس آف ریسرچ ،ْ انوویشن اینڈ کمرشلائزیشن نیپرنٹنگ اینڈ پبلیکیشن ،ْ کامرس انڈسٹری اور بزنس کمیونٹی سے وابستہ افراد کی تربیت کے لئے "حقوق ملکیت دانش "کے موضوع پر قومی سمینار منعقد کیا۔ آکسفورڈ یونیورسٹی پریس کے منیجر ،ْ ملک بلال حیدر سیمینار کے مقرر تھے جبکہ صدارت وائس چانسلر ،ْ پروفیسر ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کی۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ اس سیمینارکا موضوع بہت اہم ،ْ ارجنٹ اور متعلقہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سیمینار ہم سب کے لئے بالخصوص پرنٹنگ پریس اور لائبریری ملازمین کے لئے نہایت اہمیت کا حامل ہے تاکہ اُن کو ملکیتی حقوق کے بارے میں آگاہی اور ملکیتی حقوق کے چوری ہونے یا کسی کی ملکیتی حقوق پر ڈھاکہ ڈالنے کی سزائوں کے بارے میں مکمل علم ہو۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ معاشرتی مسائل پر قابو پانے کے لئے "آگاہی اورشعور بیدار کرنے کی سیریز یونیورسٹی میں پونے چار سال سے جاری ہے اور یہ سیمیناراُن تقریبات کا حصہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان عالمی تجارتی تنظیم(WTO)کا ممبر اور حقوق ملکیت دانشکے تجارتی پہلوئوں پردستخط کرنے والا ملک ہے اس لئے ہر پاکستانی پر اِ س معاہدے کی پاسداری لازم ہے۔

ڈاکٹر شاہد صدیقی نے کہا کہ پلیجیئرزم )تخلیقی تحریری مواد کا سرقہ( بھی کاپی رائٹ کا ایک حصہ ہے اور ہم نے امتحانات کے نظام کی شفافیت کو یقینی بنانے کے لئے امتحانی مراکز میں سخت نگرانی کا نظام نافذ کیا ہے اور اس ضمن میں خصوصی ٹیمیں بھی تشکیل دی ہیں۔۔ڈاکٹر شاہد صدیقی نے امید ظاہر کی کہ اس سیمینار سے یونیورسٹی کے پرنٹنگ پریس اور لائبریری کے ملازمین بھر پور استفادہ حاصل کریں گے اور طلبہ میں نقل کے رجحان میں کمی آئے گی اور پڑھنے کی عادت بڑھے گی۔ملک بلال حیدر نے حقوق ملکیت دانش پر تفصیلی لیکچر دیا ۔ آفس آف ریسرچ ،ْ انوویشن اینڈ کمرشلائزیشن کی چئیرپرسن ،ْ پروفیسر ڈاکٹر نغمانہ رشید نے کلمات تشکر ادا کئے۔