چین،جاپان اور جنوبی کوریا کے سربراہوں کی ٹوکیو میں ملاقات

شمالی کوریا کی موجودہ صورتحال سمیت اہم علاقائی وعالمی امور پر تبادلہ خیال

بدھ مئی 18:11

ٹوکیو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) جاپان،جنوبی کوریا اور چین کے رہنماؤں نے ٹوکیو میں سہ فریقی ملاقات کی اور شمالی کوریا کے ایشو سمیت دیگر اہم علاقائی و عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا۔ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے جاپانی وزیراعظم شنزوایبے نے کہا کہ ہمیں جزیرہ نما کوریا کی جوہری ہتھیاروں سے دستبرداری کی حالیہ پیشرفت کو شمال مشرقی ایشیاء میں امن واستحکام کے قیام کیلئے ایک موقع کے طور پر استعمال کرنا چاہئے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری شمالی کوریا کے تعاون کو ایک ٹھوس اقدام کیلئے یقینی بنائے۔اس موقع پر جنوبی کوریا کے رہنما مون چائی ان نے کہا کہ تینوں سربراہان کے درمیان یہ اتفاق رائے طے پایا ہے کہ جزیرہ کے مکمل ہتھیاروں سے پاک ہونا،مستقل قیام امن اور شمالی وجنوبی کوریا کے درمیان تعلقات کی بہتری شمال مشرقی ایشیاء میں امن واستحکام کے لئے انتہائی اہم ہے۔چینی رہنما لی نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب آزادانہ تجارت کے بنفشریز ہیں اور اس سلسلے میں مزید اقدامات کئے جائیں گی۔

متعلقہ عنوان :