ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیر میں فنڈز کی خوردبرد سمیت واٹر بورڈ اور سندھ اسمبلی میں خلاف ضابطہ بھرتیوں کے معاملے نیب کوانکوائری کا حکم

بدھ مئی 18:51

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) سندھ ہائی کورٹ نے ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیر میں فنڈز کی خوردبرد سمیت واٹر بورڈ اور سندھ اسمبلی میں خلاف ضابطہ بھرتیوں کے معاملے نیب کوانکوائری کا حکم دے دیا۔بدھ کو سندھ ہائی کورٹ میں ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیر میں فنڈز کی خوردبرد سمیت واٹر بورڈ اور سندھ اسمبلی میں خلاف ضابطہ بھرتیوں کے دائر درخواست کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے نیب کورٹ کو ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیر کے فنڈز میں خوربرد سمیت واٹر بورڈ اور سندھ اسمبلی میں ہونے والی بھرتیوں پر نیب حکام کو انکوائری کا حکم دیا۔

(جاری ہے)

عدالت نینیب حکام کو ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیراتی فنڈز میں بڑے پیمانے پر خوردبرد کی شکایات کی انکوائری کرکے 12 جون تک رپورٹ جمع کرانے کا حکم دیا۔۔عدالت کا نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ نیب نے ایم پی اے ہاسٹل کی تعمیراتی فنڈز میں خوردبرد سمیت خلاف ضابطہ بھرتیوں کی انکوائری پہلے سے شروع کررکھی ہے۔

۔واضح رہے کہ ایم کیو ایم کی سابق رکن اسمبلی کی سابق رکن اسمبلی کی ملازمہ افشاں منصور نے دائر کررکھی ہے،، جس میں انہوں نے ایم پی اے ہاسٹل کی نئی عمارت کے تعمیراتی فنڈز سمیت خلاف ضابطہ بھرتیوں کی نیب کے زریعے تحقیقات کرانے کی استدعا کی گئی تھی