یہودی لابی انتہائی مضبوط ،امریکہ نے در اصل اپنی نہیں اسرائیل کی پالیسی اپنائی ہوئی ہے ‘ طلعت مسعودی

ایران سے جوہر ی معاہدہ ختم کرنے پر امریکہ کے حلیف بھی ناراض اور پریشان ،لیکن سب بے بس ہیں ‘ دفاعی تجزیہ کار

بدھ مئی 20:26

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) دفاعی تجزیہ کار لیفٹیننٹ جنرل (ر) طلعت مسعود نے کہا ہے کہ امریکہ میں یہودی لابی انتہائی مضبوط ہے اور امریکہ نے در اصل اپنی نہیں اسرائیل کی پالیسی اپنائی ہوئی ہے ،،ایران سے جوہر ی معاہدہ ختم کرنے پر امریکہ کے حلیف بھی اس سے ناراض اور پریشان ہیں لیکن یہ سب بے بس ہیں ، امریکی فیصلے کے انتہائی منفی اثرات مرتب ہوں گے اور لا محالہ کسی نہ کسی طرح اس کے پاکستان پر بھی اثرات مرتب ہوں گے۔

سرکاری ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے طلعت مسعود نے کہا کہ امریکہ نے جس طرح معاہدہ توڑا ہے اس سے بین الاقوامی دنیا میں مسائل پیدا ہوئے ہیں اور اس کے منفی نتائج نکل سکتے ہیں۔ اقوام متحدہ اور سکیورٹی کونسل بھی اس معاہدے میں ہیں اور اگر اس طرح معاہدے توڑے جاتے رہے تو پھر عالمی معاہدوں کی کیا وقعت رہے گی اور لوگ افرا تفری کی توقع کررہے ہیں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے کے سفارتی ، اقتصادی اور معاشی طور پر بھی اثرات ہو سکتے ہیں ۔۔امریکہ نے دوہرا معیار اپنا رکھا ہے ، امریکہ میں یہودی لابی انتہائی مضبوط ہے اور اصل میں امریکی صدر انہی کی پالیسیوں کو اپنا رہے ہیں ۔ امریکی صدر کے اقدام کے بعد اسرائیل کے وزیر اعظم کے بیان سے بھی ثابت ہو گیا ہے کہ امریکہ نے اپنی نہیں بلکہ اسرائیل کی پالیسی اپنا رکھی ہے ۔

انہوںنے مزید کہا کہ اس اقدام کے بعد امریکہ یہ چاہے گا کہ پاکستان اور ایران کے تعلقات نہ بڑھیں اور اس حوالے سے پاکستان پر بھی اثرات مرتب ہوں گے۔ ایران اور سعودی عرب میں گہرے اختلافات ہیں اوراسی سے اسرائیل اور دوسری طاقتیں فائدہ اٹھا رہی ہیں ۔ موجودہ حالات میں امت مسلمہ کو اتحا دکے ذریعے اپنے اندرونی اختلافات کو ختم کرنا ہوگا۔