خیبر پختونخوا حکومت نے ہزارہ کے علماء کرام کو اعزازیہ کی ادائیگی شروع کر دی

بدھ مئی 23:14

مانسہرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) خیبر پختونخوا حکومت نے ہزارہ کے علماء کرام کو مقررہ اعزازیہ کی ادائیگی شروع کر دی۔ صوبائی حکومت نے ہزارہ ڈویژن کے اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں سے تفصیلات طلب کر لی، چھ ماہ انتظار کے بعد دوبارہ وظیفہ کی ادائیگی کا معاملہ شروع کر دیا گیا ہے۔

(جاری ہے)

اس بارے میں صوبائی حکومت نے دسمبر میں ایک سروے کرایا تھا جس کے بعد جامع مساجد کے خطباء اور آئمہ کرام کو ماہانہ دس ہزار روپے وظیفہ کی ادائیگی کرنی تھی تاہم تمام مراحل مکمل ہونے کے بعد علماء کرام نے بینکوں میں اکائونٹس بھی کھلوائے تھے مگر اعزازیہ جاری نہیں ہوا۔

ذرائع نے بتایا کہ اب صوبائی حکومت نے مختلف اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں سے تفصیلات طلب کر لی ہیں جبکہ اوقاف بھی مساجد کی نگرانی اور وظائف کو ادائیگی کیلئے معاونت کرے گا۔ ضلع مانسہرہ کی 700، ایبٹ آباد 500 اور ہری پور کی 600 مساجد کے علماء کرام و آئمہ کرام کو وظائف کی ادائیگی کی جائے گی جو آئندہ ماہ متوقع ہے۔

متعلقہ عنوان :