سکھر میں تجاوزات آپریشن کی آڑ میں پولیس نے غریب محنت کشوں کا تشدد کا نشانہ بنانا شروع کردیا

غریب تربوز فروش کو چار سے پانچ پولیس اہلکار زبردستی اٹھاکر تھانے لے جانے کی کوشش کرتے رہے جبکہ دیگر پولیس اہلکار اس کے تربوز اٹھاکر تھانے لے جانے کے لئے رکشے پر لوڈ کرتے رہے

بدھ مئی 23:19

سکھر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) تربوز فروش پر پولیس اہلکاروں کا تشدد ، تھانے لے جانے کی کوشش تفصیلات کے مطابق تجاوزات آپریشن کی آڑ میں پولیس نے غریب محنت کشوں کا تشدد کا نشانہ بنانا شروع کردیا سکھر کے علاقے ایوب گیٹ پر فٹ پاتھ پر بیٹھے تربوز فروش کو فٹ پاتھ سے نہ ہٹنے پر سکھر پولیس کے اہلکاروں نے تشدد کا نشانہ بنانا شروع کردیا، غریب تربوز فروش کو چار سے پانچ پولیس اہلکار زبردستی اٹھاکر تھانے لے جانے کی کوشش کرتے رہے چار اہلکار کس طرح غریب تربوز فروش کو بائیک پر بٹھاکر تشدد کا نشانہ بناتے رہے ، جبکہ دیگر پولیس اہلکار اس کے تربوز اٹھاکر تھانے لے جانے کے لئے رکشے پر لوڈ کرتے رہے ، ضلعی پولیس کے اہلکاروں کی جانب سے اس طرح کے واقعات عام ہوتے جارہے ہیں، مگر پولیس کے اعلیٰ افسران اس جانب توجہ دینا مناسب ہی نہیں سمجھ رہے ہیں۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ تجاوزات آپریشن کی آڑ میں پولیس نے غریب محنت کشوں کو تشدد اور ریڑھیاں کلٹی کرنا ،سامان پھینکنا معمول بنا لیا جگہ جن علاقوں سے پولیس اہلکاروں کو بھتہ دیا جاتاوہاں کسی قسم کی کاروائی نہیں کی جاتی ہے ۔

متعلقہ عنوان :