ہمیں دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ دنیاوی تعلیم کے حصول پر خصوصی توجہ دینا ہوگی، ہمارا مذہب ہمیں درس دیتا ہے کہ اگر تعلیم کے حصول کے لئے ہمیں چین بھی جانا پڑے تو جانا چاہئے،میر عبدالقدوس بزنجو

بدھ مئی 23:10

کوئٹہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 مئی2018ء) وزیراعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجونے کہا ہے کہ ہمیں دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ دنیاوی تعلیم کے حصول پر خصوصی توجہ دینا ہوگی تب جاکر ہم ترقیاتی یافتہ ممالک کی صف میں شامل ہوسکتے ہیں، ہماری زیادہ سے زیادہ کوشش ہونی چاہئے کہ بہتر تعلیم کے مواقعوں میں اضافہ کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز مولانا محمد خان شیرانی اسلامک کالج آف ماڈرن سائنسز کی افتتاحی تقریب کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

تقریب میں اسپیکر بلوچستان صوبائی اسمبلی محترمہ راحیلہ حمید خان درانی، مولانا محمد خان شیرانی، رکن صوبائی اسمبلی مولانا عبدالواسع اور سینیٹر حافظ حمداللہ بھی موجود تھے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ اسلامک کالج آف ماڈرن سائنسز کا قیام انتہائی اہم اقدام ہے جس سے بلوچستان کے نوجوانوں کو بہت فائدہ ہوگا۔

(جاری ہے)

وزیراعلیٰ نے کہا کہ دینی تعلیم کے ساتھ ساتھ ہمیں دنیاوی تعلیم،، سائنس وٹیکنالوجی اور دیگر شعبوں میں تعلیم کے حصول کے لئے ہر ممکن کوشش کرنی چاہئے کیونکہ جو ممالک آج ترقی کی منازل طے کرچکے ہیں انہوں نے تعلیم پر زیادہ سے زیادہ توجہ مرکوز کی۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ ہمارا مذہب ہمیں درس دیتا ہے کہ اگر تعلیم کے حصول کے لئے ہمیں چین بھی جانا پڑے تو جانا چاہئے، اگر ہم تعلیم یافتہ ہوں گے تو دنیا کے چیلنجز کا مقابلہ کرسکیں گے اور اپنے ملک کا دفاع کرسکیں گے۔ وزیراعلیٰ نے مولانا محمد خان شیرانی کی اس کاوش کو سراہتے ہوئے کہا کہ وہ خود مذہبی ہونے کے ساتھ ساتھ ایک انتہائی نفیس انسان دوست شخصیت کے مالک ہیں۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ مولانا شیرانی نے کبھی بھی قومیت اور لسانیت پر سیاست میں اہمیت نہیں دی بلکہ سب کو ساتھ لے کر چلے جوانتہائی قابل تقلید عمل ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ اسلامک کالج آف ماڈرن سائنسز کا قیام ایک اعلیٰ اقدام ہے اور اس مقصد کی کامیابی کے لئے ہم مولانا شیرانی کے ہمیشہ ساتھ کھڑے رہیں گے اور حکومت کی طرف سے جتنا ممکن ہوسکے معاونت اور تعاون فراہم کریں گے۔ بعدازاں وزیراعلیٰ نے کالج کا باقاعدہ افتتاح کیااور اس کے مختلف شعبوں کا معائنہ کیا۔